Sunday , September 23 2018
Home / Top Stories / ایران کا مسافربردار طیارہ حادثہ کا شکار ‘ 66 افراد ہلاک

ایران کا مسافربردار طیارہ حادثہ کا شکار ‘ 66 افراد ہلاک

تہران ۔ 18فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) ایران کا ایک مسافربردار طیارہ جس میں 60مسافر بشمول ایک بچہ اور باقی 6 ارکان عملہ سوار تھے اور جو اندرون ملک پرواز پر تھا ملک کے زگروس پہاڑوں سے ٹکراکر حادثہ کا شکار ہوگیا اور اس میں سوار تمام 66 افراد ہلاک ہوگئے ۔ حکومت کے ترجمان نے کہا کہ ایران کی قومی ہنگامی خدمات کا ایک ہیلی کاپٹر مقام حادثہ پر روانہ کیا گیا تھا ۔ حالانکہ اس علاقہ میں موسم انتہائی ناخوشگوار تھا ۔ راحت رسانی اور بچاؤ تنظیم نے جو ایران کی ہلال احمر تنظیم کا ایک شعبہ ہے کہا کہ اس نے اس علاقہ کو 12ٹیمیں روانہ کی ہیں ۔ اس حقیقت کے باوجود کہ یہ علاقہ پہاڑ؁ ہے اور ایمبولنس کاریں اس کے راستوں پر نہیں چل سکتیں ۔ پیدل ٹیمیں روانہ کی گئی ہیں ‘اس تنظیم کے ترجمان مجتبیٰ خالدی اور سرکاری خبر رساں ادارہ ’’ اثنا‘‘ نے کہا کہ برسوں کی بین الاقوامی تحدیدات میں ایران کو بیرونی سطح پر الگ تھلگ کردیا ہے ۔ اس کے مسافر طیارے جو بہت پرانے ہیں جدید کاری اور دیکھ بھال کیلئے جدوجہد کرتے ہیں کئی فضائی حادثات ہوچکے ہیں ۔ حال ہی میں 2014ء میں سپاہان طیارہ حادثہ کا شکار ہوچکا ہے جس میں 39 افراد ہلاک ہوگئے تھے ۔ طباطبائی نے کہا کہ آج کا طیارہ حادثہ اس کے باوجود پیش آیا کہ طیارہ دو انجن رکھتا تھا اور اسیمان کمپنی کی ملکیت تھا جس کے پاس 36طیارے ہیں ۔ جن میں سے آدھے 105 نشستی فاکر۔100 طیارے ہیں ۔ تین طیارے بوئنگ ۔727ہیں جو تقریباً اتنے ہی پرانے ہیں جتنا پرانا کہ اسلامی جمہوریہ ایران ہے ۔ اس کمپنی کے طیارے پہلی بار 1980ء میں پرواز پر روانہ ہوئے تھے ۔ طیاروں کی خریداری پر امتناع عائد کیا گیا ہے ‘ حالانکہ ایران نے 2015 میں عالمی طاقتوں کے ساتھ ایک معاہدہ پر دستخط کئے ہیں ۔ شہری ہوا بازی ‘ پروازوں اور طیاروں کی خریداری پر امتناع برخواست کیا جانا چاہیئے ۔ اس معاہدہ پر اسیمان کمپنی نے بھی دستخط کئے تھے اور گذشتہ جون کو تین ارب مالیاتی 737میکس جیٹ طیارے خریدنے کا معاہدہ طئے پایا تھا جس پر ہنوز عمل درآمد باقی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT