Friday , December 15 2017
Home / Top Stories / ایران کے میزائیل تجربے امریکی تحدیدات نظر انداز

ایران کے میزائیل تجربے امریکی تحدیدات نظر انداز

FILE - This file picture released by the official website of the Iranian Defense Ministry on Sunday, Oct. 11, 2015, claims to show the launching of an Emad long-range ballistic surface-to-surface missile in an undisclosed location. Iran tested a ballistic missile again in November 2015, a U.S. official said Dec. 8, describing the second such test since this summerís nuclear agreement. The State Department said only that it was conducting a "serious review" of such reports. The test occurred on Nov. 21, according to the official, coming on top of an Oct. 10 test Iran confirmed at the time. The official said other undeclared tests occurred earlier than that, but declined to elaborate. The official wasnít authorized to speak on the matter and demanded anonymity. (Iranian Defense Ministry via AP)

تہران ۔ 8 ۔ مارچ (سیاست ڈاٹ کام) ایران نے آج مزاحمتی طاقت کا مظاہرہ کرتے ہوئے کئی بالسٹک میزائیل تجربات کئے جسے جنوری میں میزائیل پروگرام پر عائد امریکی تحدیدات کی خلاف ورزی تصور کیا جارہا ہے ۔ سرکاری خبر رساں ایجنسی ارنا نے کہا کہ ان تجربات کے ذریعہ یہ ثابت کیا گیا ہے کہ ملک علاقائی سالمیت کے خلاف کسی بھی خطرہ کا سامنا کرنے کیلئے تیار ہے۔ سرکاری ٹیلی ویژن پر میزائیل کی تصاویر دکھائی گئی اور ملک کے مختلف حصوں میں داغے گئے بالسٹک میزائیل بھی نمایاں کئے گئے۔ امریکہ نے ایران کی نیوکلیئر سرگرمیوں سے متعلق تحدیدات ختم ہوتے ہی فوری بعد جنوری میں میزائیل پروگرام پر تازہ تحدیدات عائد کی تھی۔ ارنا نے بتایا کہ ان نئے تجربات کو ’’ولایت کی طاقت‘‘ کا نام دیا گیا ہے اور انقلابی گارڈس و ایرو اسپیس فورسس نے کامیابی کے ساتھ یہ تجربات کئے۔

TOPPOPULARRECENT