Tuesday , November 21 2017
Home / شہر کی خبریں / ایس ایس سی ناکام امیدواروں کو اوپن اسکول امتحان میں شرکت کی ہدایت

ایس ایس سی ناکام امیدواروں کو اوپن اسکول امتحان میں شرکت کی ہدایت

50 ہزار امیدواروں میں مایوسی ، اسکول انتظامیہ بھی پریشان حال
حیدرآباد۔ 28 ڈسمبر ( سیاست نیوز)  حکومت کی جانب سے سال گذشتہ ایس ایس سی میں ناکام امیدواروں کے لئے اوپن اسکول امتحانات میں شرکت کی ہدایت سے امیدواروں کو مایوسی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اور امیدوار تا حال اس بات کے منتظر ہیں کہ حکومت کے احکام میں کوئی ترمیم رونما ہوگی ۔ زائد از 50 ہزار امیدوار جو کہ سال گذشتہ ایس ایس سی امتحانات میں ناکام ہوئے وہ اوپن اسکول امتحانات کی فیس بھی ادا نہیں کر پائے ہیں چونکہ 4؍ڈسمبر کو فیس کی آخری تاریخ گذر ہوچکی ہے جس کی وجہ سے فیس کا ادخال ممکن نہیں ہے ۔ امیدواروں کا کہنا ہے کہ ابتداء میں تو انہیں اس بات کا پتہ ہی نہیں تھا کہ وہ ایس ایس سی امتحان کے بجائے اوپن اسکول امتحانات میں شرکت اہل قرار پائیں گے لیکن جب یہ فیصلہ کرلیا گیا کہ تو اس کی مناسب تشہیر نہ ہونے کے سبب وہ تاریخ کے گذرنے تک بھی فیصلہ سے واقف نہیں تھے ۔ طلبہ ‘ اولیائے طلبا کے علاوہ اسکول انتظامیہ کے ذمہ داران نے بھی اس مسئلہ پر بے چینی کی کیفیت پائی جاتی ہے ۔ طلبہ اور اولیائے طلبہ کا کہنا ہے کہ جو ایک مضمون میں ناکام ہوئے ہیں ان امیدواروں کو بھی اوپن ایس ایس سی کے تحت تین مضامین کے امتحانات تحریر کرنے پڑرہے ہیں جو کہ طلبہ کے نہ صرف باعث تکلیف ہے بلکہ انہیں اوپن اسکول کے طلبہ کی حیثیت سے سرٹیفکیٹس جاری کئے جائیں گے جو کہ مزید تکلیف دہ ثابت ہو رہا ہے ۔ علاوہ ازیں ایس ایس سی امتحانات میں طلبہ سے اگر فی مضمون فیس وصول کی جاتی ہے تو وہ 110 روپئے کے قریب ہوتی ہے جبکہ اوپن اسکول میں ناکام امیدواروں کو 12 تا 15 سو روپئے ادا کرنے پڑ رہے ہیں ۔ ان مسائل کے باوجود جو طلبہ اوپن اسکول سے امتحان لکھنے تیار ہیں انہیں اب فیس کے ادخال کا کوئی موقع دستیاب نہیں ہے اسی لئے کم ازکم فیس کے ادخال کی تاریخ میں توسیع فراہم کرتے ہوئے موقع دیا جانا چاہئے یا پھر حکومت سال گذشتہ ناکام طلبہ کو دوبارہ ایس ایس سی سپلمینٹری امتحانات میں شرکت کا موقع فراہم کرنے کے لئے محکمہ تعلیم کو احکام جاری کرتی ہے تو ایسی صورت میں ان طلبہ کو صرف ناکام  ہونے والے مضامین کے امتحانات تحریری کرنے کا موقع میسر آئیگا ۔

TOPPOPULARRECENT