Saturday , June 23 2018
Home / شہر کی خبریں / ایس ایم ایس کے ذریعہ پاسپورٹ کی انکوائری

ایس ایم ایس کے ذریعہ پاسپورٹ کی انکوائری

مختصر مدتی تجربہ کے بعد باضابطہ عمل آوری کا آغاز، سٹی پولیس کمشنر مہیندر ریڈی کی پریس کانفرنس

مختصر مدتی تجربہ کے بعد باضابطہ عمل آوری کا آغاز، سٹی پولیس کمشنر مہیندر ریڈی کی پریس کانفرنس
حیدرآباد ۔ 11 اکٹوبر (سیاست نیوز) شہریان حیدرآباد کو اب پاسپورٹ انکوائری کیلئے دفاتر کے چکر کاٹنے کی ضرورت نہیں پڑے گی چونکہ سٹی پولیس نے ایک نیا طریقہ کار رائج کیا ہے جس کی مدد سے تمام تفصیلات ایس ایم ایس کے ذریعہ حاصل ہوجائیں گی۔ اس طریقہ کار کو باضابطہ طور پر آج سے سارے شہر میں روبہ عمل لایا جارہا ہے۔ یہ بات سٹی پولیس کمشنر مسٹر مہندر ریڈی نے بتائی جو آج یہاں ایک پریس کانفرنس کو مخاطب تھے۔ انہوں نے بتایا کہ یکم ؍ اکٹوبر ہی سے اس عمل کا آغاز ہوچکا تھا جو اب تک تجرباتی طور پر جاری تھا۔ تاہم آج سے سارے شہر میں اس پر عمل آوری کی جارہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ پولیس کو عوام دوست پالیسیوں کے تحت اس نظام کو رائج کیا جارہا ہے تاکہ عوام کو پولیس کے مزید قریب کیا جاسکے۔ انہوں نے بتایا کہ پاسپورٹ کیلئے درخواست داخل کرنے والے شہریوں کو پاسپورٹ ویریفکیشن کے تعلق سے تمام تر تفصیلات فراہم کی جائیں گی۔ ان کے گھر کونسا عہدیدار کس وقت آئے گا اور انہیں اس وقت کونسے دستاویزی ثبوت پیش کرنے ہیں ان تمام کے تعلق سے بذریعہ ایس ایم ایس رہنمائی کی جائے گی تاکہ شہریوں کو آسانی فراہم ہو۔ ساتھ ہی کمشنر پولیس نے کہا کہ اس طریقہ کار کا اہم مقصد کرپشن کا خاتمہ بھی ہے۔ کمشنر پولیس حیدرآباد نے بتایا کہ ویریفکیشن کے بعد درخواست کے مراحل تک پیغام دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ جہاں اس طریقہ کار سے شہریوں کو سہولت ہوگی وہیں دوسری طرف بدعنوانیوں اور ایک سے زائد پاسپورٹ حاصل کرنے اور جرائم پیشہ افراد کی غیرسماجی حرکتوں پر روک لگائی جاسکتی ہے۔ انہوں نے شہریوں کو اس بات کا بھروسہ دلاتے ہوئے کہا کہ اگر کسی عہدیدار جو پاسپورٹ کا ویریفکیشن کررہا ہے اس کی وجہ سے مشکلات پیش آتی ہیں تو درخواست گذار اعلیٰ پولیس عہدیداران کو اس کی اطلاع دے سکتا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ایس ایم ایس پیغام میں متعلقہ اعلیٰ عہدیدار کا نمبر بھی دیا جائے گا۔ اس بات کی اطلاع بھی لی جائے گی کہ آیا ان کے پاسپورٹ کے ویریفکیشن میں انہیں کوئی مشکل تو نہیں آئی اور پولیس عہدیداروں کا طریقہ کار کیسا تھا۔ انہوں نے کہاکہ پاسپورٹ حاصل ہونے کے بعد بھی سٹی پولیس کمشنریٹ سے تفصیلات فراہم کی جائیں گی۔ انہوں نے بتایا کہ کم از کم تین ہفتوں میں یہ عمل پورا ہوجائے گا۔ کمشنر پولیس پاسپورٹ نے ساتھ ہی پاسپورٹ انکوائری کرنے والے اسپیشل برانچ کے مسائل پر بھی توجہ دینے کا وعدہ کیا اور کہا کہ عملہ کی کمی اور کام کے بوجھ کو کم کرنے کے اقدامات کا بھی یقین دلایا۔ اس موقع پر ایڈیشنل کمشنر لاء اینڈ آرڈر مسٹر انجن کمار اسپیشل برانچ مسٹر ملاریڈی و دیگر بھی موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT