Sunday , August 19 2018
Home / شہر کی خبریں / ایل ای ڈی اسٹریٹ لائٹس سے سالانہ 156 ملین یونٹ برقی کی بچت

ایل ای ڈی اسٹریٹ لائٹس سے سالانہ 156 ملین یونٹ برقی کی بچت

پراجکٹ پر 273 کروڑ کا خرچ ، سرینواس چاری ایگزیکٹیو انجینئرس جی ایچ ایم سی سے نمائندہ سیاست کی بات چیت
رتنا چوٹرانی
حیدرآباد ۔ 14 ۔ دسمبر : گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن (جی ایچ ایم سی ) کی جانب سے شہر کے اسٹریٹ لائٹوں کو ایل ای ڈی میں تبدیل کرنے کے بعد اس کے مثبت نتائج برآمد ہورہے ہیں ۔ ایل ای ڈی بلبس کے استعمال سے سالانہ 156 ملین یونٹس کی بچت ہورہی ہے ۔ یہ بات ایگزیکٹیو انجینئر جی ایچ ایم سی مسٹر سرینواس چاری نے بتائی ۔ وہ آج یہاں نمائندہ سیاست سے خصوصی بات چیت کے دوران یہ بات بتائی ۔ اس موقع پر انہوں نے بتایا کہ دونوں شہروں کے جی ایچ ایم سی حدود میں 4.50 لاکھ اسٹریٹ لائٹس جملہ 73 میگا واٹس برقی پر مشتمل ہیں ۔ جی ایچ ایم سی نے مسرس انرجی ایفینسٹ سرویس ( ای ای ایس ) سے انرجی ایفینسی پراجکٹس کے تحت 273 کروڑ روپیوں کا یادداشت مفاہمت مکمل کرلیا ہے ۔ اس معاہدہ کے تحت بلدیہ کی جانب سے کسی قسم کی کوئی سرمایہ کاری نہیں کی گئی ہے ۔ سرینواس چاری نے مزید بتایا کہ فی الحال جی ایچ ایم سی اسٹریٹ لائٹس پر سالانہ 189 کروڑ روپیے ادا کررہا ہے جب کہ نئے لائٹوں کی تنصیب کے بعد 55 فیصد توانائی کی بچت کے علاوہ آمدنی میں پچاس فیصد کی بچت ہورہی ہے ۔ انرجی ایفینیٹ سروسیس کی سرمایہ کاری کو سات سال کی مدت میں بچت کے ذریعہ پابجائی کرلی جائے گی ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ توانائی بچت کے منصوبے اور اقدامات کے مثبت نتائج حاصل ہورہے ہیں ۔ اس طرح برقی استعمال 73 میگا واٹس سے 43 میگا واٹ یعنی 156 ملین یونٹس کی سالانہ بچت کی جارہی ہے ۔ جب کہ سابق میں نارمل لائٹس کے استعمال کے باعث 85 فیصد روشنی تھی جب کہ ایل ای ڈی کے استعمال سے اس کی روشنی 98 فیصد ہوگئی ہے ۔ سابق میں لاپرواہی کے باعث لائٹوں کو کھلا چھوڑ دیا جارہا تھا تاہم اب نئے منصوبے کے تحت یہ لائٹس خود بخود بند ہوجارہے ہیں کیوں کہ یہ فوٹو سنسر سے مربوط ہے اور سورج کی کرنیں بھی اس کو بند کرنے میں معاون ثابت ہورہے ہیں ۔ ایگزیکٹیو انجینئر جی ایچ ایم سی نے کہا کہ دونوں شہروں حیدرآباد اور سکندرآباد میں جاریہ ماہ کے دوران 30 تا 40 ہزار بلبس کو تبدیل کرتے ہوئے ایل ای ڈی کی تنصیب عمل میں لائی گئی ہے تاحال 3.8 لاکھ بلبس کو بدل کر ایل ای ڈی نصب کیا گیا ہے ۔ سال 2018 تک آٹو میٹک سوئچنگ نظام پر پوری طرح عمل آوری ہوگی ۔ اس کو آن لائن کے ذریعہ بھی مشاہدہ کیا جاسکتا ہے ۔ دن کے وقت آیا لائٹس ہیں یا نہیں ۔ عام افراد بھی اپنے سیل فون کو جی پی ایس سے مربوط کر کے اس کے اوقات سے واقف ہوسکتے ہیں ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT