Wednesday , June 20 2018
Home / شہر کی خبریں / ایمسیٹ کے جوابی بیاض میں غلطی نہ کرنے کا مشورہ

ایمسیٹ کے جوابی بیاض میں غلطی نہ کرنے کا مشورہ

دفتر سیاست میں ایمسیٹ کا تمثیلی امتحان، ماہرین تعلیم کا خطاب

دفتر سیاست میں ایمسیٹ کا تمثیلی امتحان، ماہرین تعلیم کا خطاب
حیدرآباد 19 اپریل (سیاست نیوز) ایمسیٹ کے نشانات کے حصول میں او ایم آر کی غلطی سے 5 تا 7 نشانات کا فرق پڑرہا ہے۔ طالب علم کلید، میں جوابات کو دیکھ کر اپنے صحیح جوابات سے کم نشان دیکھ کر تشویش ظاہر کرتا ہے۔ یہ دراصل او ایم آر کے دائرہ کو غلط بھرنا ہے۔ ان باتوں کی محبوب حسین جگر ہال عابڈس میں ادارہ سیاست کے زیراہتمام منعقدہ ایمسیٹ ماڈل ٹسٹ کے موقع پر ماہرین نے طلبہ کی رہبری کرتے ہوئے کیا۔ جناب جی احمد ذیشان اسوسی ایٹ پروفیسر ڈپارٹمنٹ آف ای سی ای، مسٹر سید مظہرالدین اسوسی ایٹ فیر گلوبل کالج، پروفیسر فضل الرحمن وائس پرنسپل گلوبل کالج آف فارمیسی ڈائرکٹر رویندرا تیواری پرنسپل نے کیا۔ اور اپنے لکچر میں طلبہ کو بتایا کہ ایمسیٹ میں سب سے اہم وقت اور اس کے مطابق ایمسیٹ کی منصوبہ بندی حکمت عملی بتانے اگر کوئی ایمسیٹ کے ذریعہ اچھے کورس اور کالج میں داخلے حاصل کرلیتا ہے تو اس کے چار سالہ پروفیشنل کورس کے بعد 40 سالہ زندگی شاندار ہے۔ حیدرآباد کے مضافات میں کئی کالجس ہیں جو عصری سہولیات سے لیس ہیں۔ ایمسیٹ میں کامیابی اور اچھے رینک کے لئے کوچنگ اور سلف اسٹڈی کے ساتھ ماڈل ٹسٹ (تمثیلی امتحان) نہایت معاون ثابت ہوتے ہیں۔ مختلف کالجس اور اداروں میں تعلیم حاصل کرتے ہوئے ایسے امتحان کے لئے نہ صرف خود کا محاسبہ ہوتا ہے بلکہ او ایم آر کی مشق سے امکانی غلطیوں کا تدارک ہوتا ہے۔ ساتھ ہی نمونہ سوالات سے واقفیت ہوتی ہے۔ کیرئیر کونسلر سیاست ایم اے حمید نے ایمسیٹ کے رینک کے لئے انٹر کے 25 فیصد ویٹیج بتاکر اس تناسب سے اچھے رینک کی مساعی کریں۔ ایمسیٹ کوچنگ سری چندرا جونیر کالج اور رائل ریجنسی آصف نگر کے طلبہ نے حصہ لیا۔ منظور احمد نے شکریہ ادا کیا۔

TOPPOPULARRECENT