Tuesday , December 11 2018

ایم ایل اے کی ساری تنخواہ یتیم بچوں و بیواوں کیلئے وقف ‘ فرحت خان کا اعلان

یاقوت پورہ میں پری پیڈ برقی میٹرس بٹھانے کی اجازت نہیں دی جائیگی ۔ سفید راشن کارڈ پر مفت برقی فراہم کرنے کا مطالبہ ۔ انتخابی جلسہ سے خطاب
حیدرآباد 4 ڈسمبر ( سیاست نیوز ) صدر مجلس بچاو تحریک و امیدوار حلقہ اسمبلی یاقوت پورہ مجید اللہ خاں فرحت نے اعلان کیا کہ وہ رکن اسمبلی منتخب ہونے کے بعد اپنی ماہانہ تقریبا دو لاکھ روپئے کی تنخواہ اپنے حلقہ کے یتیم یسیر بچوں اور بیواوں کیلئے وقف کردینگے اور اس تنخواہ کا ایک روپیہ بھی خود پر یا اپنے اہل و عیال پر خرچ نہیں کرینگے ۔ یہ تنخواہ عوام کے ٹیکس سے حاصل ہوتی ہے اور وہ سمجھتے ہیں کہ اس پر قوم کے غریب اور مفلوک الحال بچوں اور بیواوں اور یتیموں کا حق ہے اور وہ اپنی جانب سے یہ حق غریبوں تک پہونچا کرد م لیں گے ۔ مجید اللہ خاں فرحت آج شام اپنے حلقہ میں سالم چوک پر ایک عظیم الشان انتخابی جلسہ سے خطاب کر رہے تھے جس میں عوام نے ہزاروں کی تعداد میں شرکت کرتے ہوئے مجیداللہ خاں فرحت کی تائید کا اعلان کیا ۔سالم چوک کا یہ جلسہ حلقہ یاقوت پورہ میں ایک یقینی انقلاب کا نقیب نظر آرہا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ وہ ایوان اسمبلی میں کسی چیف منسٹر کی قصیدہ خوانی کرنے کیلئے یا خوشامد کرنے کیلئے نہیں بلکہ غریب مسلمانوں کے حق کی آواز بلند کرنے کیلئے جائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت نے ایک عوام دشمن فیصلہ کرلیا ہے ۔ اس کے تحت انتخابات کے بعد برقی کے میٹرس تبدیل کردئے جائیں گے اور یہ میٹرس پری پیڈ ہونگے ۔ پہلے ان میٹرس کو ری چارچ کرنا ہوگا اور جتنے پیسے ڈالے جائیں گے اتنی ہی برقی آئیگی ۔ یہ عوام دشمن فیصلہ ہے اور حلقہ یاقوت پورہ کے غریب عوام اس سے بہت زیادہ متاثر ہونگے ۔ موجودہ عوامی نمائندوں کو اس کی فکر نہیں ہے اس لئے وہ خاموش ہیں اور اس کام میں حکومت کا ساتھ دینگے ۔ فرحت خان نے اعلان کیا کہ وہ رکن اسمبلی منتخب ہوجانے کے بعد حلقہ یاقوت پورہ میں ایک بھی پری پیڈ میٹر نصب ہونے کی اجازت نہیں دینگے ۔ یہاں مسلمانوں کی اکثریت کرایہ کے مکانوں میں رہتی ہے ۔ حکومت کو چاہئے کہ غریبوں پر ظلم کرنے کی بجائے انہیں راحت فراہم کرے ۔ حکومت کو چاہئے کہ جو غریب لوگ کرایہ کے مکانوں میں رہتے ہیں ان کے کرایہ میںسبسڈی دی جائے ۔ انہیں سرکاری طور پر مکانات تعمیر کرکے فراہم کئے جائیں ۔ انہیں ہر ممکنہ طریقہ سے مدد دی جائے ۔ مجید اللہ خاں فرحت نے کہا کہ وہ حکومت سے جدوجہد کرینگے کہ جس کسی کے پاس سفید راشن کارڈ کو ان کو مفت برقی سربراہ کی جائے ۔ ایسا کرنا حکومتوں کا ذمہ ہے اور وہ اس کام کو انجام دینگے ۔ فرحت خان نے اعلان کیا کہ اپنی کامیابی کے بعد وہ حلقہ یاقوت پورہ سے سودخوروں کے ظلم کا مکمل خاتمہ کردینگے ۔ سود خوروں کیلئے سارے یاقوت پورہ میں کوئی جگہ نہیں ہوگی اور ان کا تعاقب کرتے ہوئے انہیںنکال باہر کیا جائیگا ۔ وہ اپنے حلقہ میں ایسی خدمت کرینگے کہ ہر گھر میں یہ احساس پیدا ہوگا کہ ان کے اپنے گھر کا کوئی فرد رکن اسمبلی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ چاہتے ہیں کہ ہر پولنگ بوتھس کی سطح پر ایک سرکاری اسکول قائم ہوسکے تاکہ غریب مسلمانوں کے بچے کسی کارخانے میں کام نہیں کریں بلکہ اسکول میں تعلیم حاصل کریں۔ وہ چاہتے ہیں کہ مسلمانوں میں کوئی بھی سطح غربت سے نچلی زندگی گذارنے پر مجبور نہ رہے ۔ مجید اللہ خاں فرحت نے کہا کہ موجودہ دور میں سارے حلقہ میں غنڈہ گردی ‘ سود خوروی اور لینڈ گرابری کا عروج ہے ۔ وہ چاہتے ہیں کہ سود خوروں ‘ غنڈہ عناصر اور لینڈ گرابرس کے ہاتھوں غریب مسلمانوں کا استحصال بند ہو اور وہ اس کیلئے ہر ممکنہ جدوجہد کرتے ہوئے قوم کی حالت میں بہتری پیدا کرینگے ۔ انہوں نے نوجوانوں سے خاص طور پر اپیل کی کہ وہ اپنی ذمہ داری کو سمجھیں ۔ ایک مقصد سے وابستہ ہوجائیں۔ پوری ذمہ داری کے ساتھ خود بھی رائے دہی میں حصہ لیں اور اپنے رشتہ داروں ‘ اہل و عیال ‘ پاس پڑوس کی رہنمائی کریں تاکہ وہ بھی اپنے ووٹ کا استعمال کرتے ہوئے حق کیلئے آواز کو بلند کرسکیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ حکومتوں کی تابعداری میںیقین نہیں رکھتے بلکہ وہ سماجی انجینئرنگ کے ذریعہ حکومتوں میں حصہ داری اور ساجھیداری کیلئے کام کرینگے ۔ وہ سارے تلنگانہ میں ایک ایسا انقلاب برپا کرینگے جس کے ذریعہ آئندہ جب کبھی انتخابات ہونگے مسلمانوں کو چھوڑ کر کوئی جماعت حکومت تشکیل نہیں دے پائے گی ۔ حکومتوں کو مسلمانوں کو اقتدار میں حصہ داری دینے پر مجبورہونا پڑیگا ۔ یہ کام وہ مسلمانوں کی تائید سے کرسکتے ہیں اس لئے وہ حلقہ کے سارے عوام سے اپیل کرتے ہیں کہ 7 ڈسمبر کو اپنے ایک ایک ووٹ کا استعمال مجلس بچاو تحریک کے حق میں کرکے انصاف کی جدوجہد کو کامیابی سے ہمکنار کریں۔

TOPPOPULARRECENT