Friday , September 21 2018
Home / اضلاع کی خبریں / ایم ایل سی کیلئے سرکاری ملازمین کی نشاندہی نامناسب

ایم ایل سی کیلئے سرکاری ملازمین کی نشاندہی نامناسب

مسلم جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے بیان پر محمد جمیل الدین کا ردعمل

مسلم جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے بیان پر محمد جمیل الدین کا ردعمل
کریم نگر۔2 فروری (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) مسلم جوائنٹ ایکشن کمیٹی کی جانب سے یہاں کانفرنس ہال میں ایک سرکاری ملازم کی نشاندہی کرتے ہوئے انہیں ایم ایل سی یا پھر تلنگانہ ریاستی سطح کارپوریشن کے صدارتی عہدہ پر فائز کرنے کی چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ، ریاستی وزراء کے تارک راما، ہریش راؤ، ایٹالہ راجندر سے کی گئی خواہش کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کوآپشن رکن ایڈوکیٹ محمد جمیل الدین نے کہا کہ مسلم جوائنٹ ایکشن کمیٹی ایک خود ساختہ تنظیم ہوکر رہ گئی ہے اور کمیٹی کا اس طرح اعلان ٹی آر ایس میں برسہا برس سے خدمات انجام دینے والے اور پارٹی کیلئے خون پسینہ ایک کرنے والے کارکنوں کے خلاف ایک طرح کی سازش ہے۔ ٹی آر ایس پارٹی میں ایک سے ایک دانشمند قابل افراد کی کمی نہیں ہے جنہیں کسی بھی اعلیٰ عہدہ پر فائز کیا جاسکتا ہے۔ محمد جمیل الدین آج اخبارات میں شائع مسلم جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے بیان پر یہاں پریس بھون میں اخباری نمائندوں سے خطاب کے دوران ان خیالات کا اظہار کررہے تھے۔ محمد جمیل الدین نے کہا کہ نشاندہی کردہ سرکاری ملازم کا تلنگانہ تحریک میں کلیدی کردار کا بتایا جانا چھوٹ کا پلندہ ہے، جبکہ پارٹی میں کئی گراں قدر خدمات انجام دینے والے کئی ارکان قائدین ہیں جنہیں بلاخوف پارٹی کے اہم عہدوں پر فائز کیا جاسکتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT