Tuesday , November 21 2017
Home / شہر کی خبریں / ایم پدمنابھم سے بھوک ہڑتال ختم کرنے پر زور

ایم پدمنابھم سے بھوک ہڑتال ختم کرنے پر زور

چندرا بابو نائیڈو کاپو طبقہ کے ساتھ انصاف کرنے سنجیدہ، مدو کرشنما نائیڈو کا بیان
حیدرآباد۔/7فبروری، ( این ایس ایس ) یہ کہتے ہوئے کہ کاپو مسئلہ کو صرف تلگودیشم حکومت ہی حل کرسکتی ہے ، تلگودیشم پارٹی کے سینئر قائدجی مدوکرشنما نائیڈو نے آج ایم پدمنابھم پر زور دیا کہ وہ ان کی بھوک ہڑتال ختم کردیں۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے مدو کرشنما نائیڈو نے الزام عائد کیا کہ وائی ایس آر کانگریس پارٹی کے صدر وائی ایس جگن موہن ریڈی نئی ریاست آندھرا پردیش کی ترقی میں مسائل پیدا کررہے ہیں۔ وائی ایس آر سی پی اور دیگر جماعتوں کے قائدین کو اپنی شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے تلگودیشم قائد نے کہا کہ بی ستیہ نارائنا اور کنا لکشمی نارائنا ریاست میں وزراء تھے جبکہ پلم راجو اور چرنجیوی مرکزی وزراء تھے۔ لیکن انہوں نے کاپو طبقہ کو ریزرویشن کی فراہمی کے بارے میں کچھ نہیں کیا۔ انہوں نے پوچھا کہ انہوں نے ان کی وزارت کے دور میں اس مسئلہ کو کیوں نہیں اٹھایا۔ انہوں نے یہ بھی الزام عائد کیا کہ وائی ایس آر سی پی کے صدر جگن نے ضلع کڑپہ سے غنڈوں کو لاکر آتشزنی اور تشدد برپا کیا جس کی وجہ دو تا تین دن ریلوے ٹریفک متاثر ہوئی۔ مدو کرشنما نائیڈو نے کہا کہ چیف منسٹر این چندرا بابونائیڈو دیگر بی سی طبقات کے مفادات کو متاثر کئے بغیر کاپو طبقہ کے ساتھ انصاف کرنے کیلئے سنجیدہ کوشش کررہے ہیں اور اس سلسلہ میں کاپو طبقہ کو ریزرویشن کا جائزہ لینے کے لئے تلگودیشم حکومت نے ایک کمیشن قائم کیا ہے جس میں تین افراد کا تعلق کاپو طبقہ سے ہے اور تین ارکان بی سی طبقہ کے ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT