Thursday , December 14 2017
Home / دنیا / ایوانکا ٹرمپ کو وائیٹ ہاؤس کا ملازم نہ سمجھا جائے

ایوانکا ٹرمپ کو وائیٹ ہاؤس کا ملازم نہ سمجھا جائے

واشنگٹن ۔ 24 ۔ مارچ : ( سیاست ڈاٹ کام ) : امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی دختر ایوانکا کو سیکوریٹی کلیرنس اور ساتھ ہی ساتھ ویسٹ ونگ میں ایک دفتر فراہم کیا جائے گا ۔ موصوفہ اپنے والد کے ساتھ اہم پالیسیاں وضع کرنے میں اہم رول ادا کریں گی ۔ لیکن انہیں ملازم قرار نہ دیا جائے ۔ جب بھی سرکاری کام کاج کی بات آتی ہے تو اس کو انجام دینے والا ملازم کہلاتا ہے لیکن یہاں ملازم محض ایک لفظ ہی نہیں بلکہ اس سے بھی کچھ زیادہ ہے کیونکہ یہ ذمہ داری نہ صرف شفافیت بلکہ اخلاقی ذمہ داری نبھانے کا نام بھی ہے ۔ سرکاری نگرانکاروں نے اس سلسلہ میں وائیٹ ہاؤس کونسل ڈان میک گہن کے نام ایک مکتوب تحریر کرتے ہوئے اس بات پر تشویش ظاہر کی ہے کہ ایوانکا کو ’ ملازم ‘ باور نہیں کیا جارہا ہے کیوں کہ اس طرح ایوانکا کو سرکاری پالیسیوں کو اپنے کاروبار اور دیگر مالیاتی مفاد والے معاملات سے نا مناسب طور پر گڈمڈ کرنے کی آزادی حاصل ہوسکتی ہے ۔ وائیٹ ہاوس نے البتہ یہ واضح کردیا ہے کہ ایوانکا بھی رضاکارانہ طور پر ملازمین کے لیے مختص قوانین پر عمل کریں گی ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT