Monday , November 19 2018
Home / Top Stories / ’ ایودھیا میں رام مندر کے قریب مسجد کی باتیں ناقابل برداشت‘

’ ایودھیا میں رام مندر کے قریب مسجد کی باتیں ناقابل برداشت‘

راہول گاندھی کو مندر کا سنگ بنیاد رکھنے کی دعوت ، بی جے پی کی سینئر لیڈر اوما بھارتی کا انٹرویو
نئی دہلی ۔ /4 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی وزیر اوما بھارتی نے کہا کہ ہندو ، دنیا کے انتہائی روادار افراد ہیں لیکن ایودھیا میں رام مندر کے قریب مسجد بنانے کی کوئی بھی بات انہیں ’عدم روادار‘ بھی بناسکتی ہے ۔ اوما بھارتی نے کانگریس کے صدر راہول گاندھی کو ایودھیا میں اپنے ساتھ رام مندر کی تعمیر کے لئے سنگ بنیاد رکھنے کی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ وہ (راہول گاندھی) ایسا کرتے ہوئے اپنی پارٹی کے گناہوں کا کفارہ ادا کرسکیں گے ۔ بی جے پی کی شعلہ بیان لیڈر اوما بھارتی نے پی ٹی آئی کو دیئے گئے انٹرویو میں مزید کہا کہ ’’ہندو دنیا کی انتہائی روادار برادری ہے ۔ سیاستدانوں سے میں اپیل کرتی ہوں کہ برائے مہربانی وہ ایودھیا میں لارڈ رام کے پیدائشی مقام کے قریب و جوار میں مسجد کی تعمیر کی باتیں کرتے ہوئے ہندوؤں کو عدم روادار نہ بنائیں ۔ اوما بھارتی نے کہا کہ جب مقدس شہر مدینہ میں کوئی مندر یا وٹیکن سٹی میں کوئی مسجد نہیں بن سکتی تو پھر ایودھیا میں بھی مسجد کی تعمیر کی باتیں غیرمنصفانہ ہوں گی ۔ انہوں نے مسئلہ ایودھیا کو اعتقاد کا نہیں بلکہ اراضی کا تنازعہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ’ اب یہ کوئی اعتقاد کا تنازعہ نہیں ہے بلکہ صرف اراضی کا تنازعہ ہے ۔ یہ طئے ہوچکا ہے کہ ایودھیا لارڈ رام کا پیدائشی مقام ہے ۔ اس پیچیدہ و حساس مسئلہ کی بیرونی عدالت یکسوئی کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے اوما بھارتی نے بشمول راہول گاندھی ، سماج وادی پارٹی کے صدراکھلیش یادو ، بی ایس پی لیڈر مایاوتی ، ٹی ایم سی سربراہ ممتا بنرجی سیاستدانوں سے تعاون کی خواہش کی ۔ اوما بھارتی نے کہا کہ ’’اس مسئلہ پر ہمیں تمام سیاسی جماعتوں کی تائید کی ضرورت ہے ۔ بشمول راہول گاندھی جی میں تمام قائدین کو میرے ساتھ رام مندر کیلئے سنگ بنیاد رکھنے کی دعوت دیتی ہوں ‘ ۔ ایسا کرتے ہوئے گاندھی خاندان کے سیاسی وارث کانگریس کے گناہوں کا کفارہ ادا کرسکتے ہیں جس جماعت نے ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر میں ہمیشہ رخنہ اندازی کی تھی ۔ اوباما بھارتی نے کہا کہ ایس پی کے سربراہ ملائم سنگھ یادو ، ممتا بنرجی ، مایاوتی اور بائیں بازو کی جماعتوں کو بھی اس مسئلہ پر بی جے پی کی تائید کرنا چاہئیے کیونکہ یہ قومی مفاد سے تعلق رکھتا ہے ۔ ’ لیکن یہ (قائدین / جماعتیں) اس مسئلہ کو حل ہونے نہیں دے رہے ہیں ۔
کانگریس کو مذہب کے نام پر ملک کو تقسیم کرنے کی عادت ترک کردینا چاہئیے ‘ اوما بھارتی نے جو 1990 ء کے دوران رام مندر تحریک میں حصہ لے چکی ہیں کہا کہ ’’ اگر وہ کہیں کہ صرف میری نعش سے گزرتے ہوئے رام مندر تعمیر کی جاسکتی ہے تو میں اس کے لئے بھی تیار ہوں ‘‘ ۔

TOPPOPULARRECENT