ایودھیا میں سکیور ٹی انتظامات پر اقبال انصاری مطمئن

ایودھیا ۔ /24 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) رام جنم بھومی بابر ی مسجد کے ملکیت کے مقدمہ کے اصل مسلم فریق اقبال انصاری نے ہفتہ کو کہا کہ وہ ایودھیا میں دھرم سنسد کے انعقاد سے قبل سکیور ٹی انتظامات سے پور ی طرح مطمئن ہیں ۔ لیکن شہر میں اتنا بڑا ہجوم جمع کرنے کے پس پردہ محرکات اور ارادوں کے بارے میں سوال اٹھایا ۔ شیوسینا اور وشواہندو پریشد ایودھیا میں علحدہ طور پر رام مندر سے متعلق پروگرامس منعقد کررہے ہیں ۔ جہاں شرپسندوں پر خفیہ نظر رکھنے کیلئے ڈرون کیمرے نصب کئے گئے ہیں اور کئی علاقوں میں سکیورٹی انتظامات کئے گئے ۔ اقبال انصاری نے جو اپنے والد ہاشم انصاری کے انتقال کے بعد مقدمہ کی ذمہ داری سنبھال رہے ہیں انھوں نے کہا، ’ اگر کسی کو مندر ۔ مسجد مسئلہ پر کچھ کہنا ہے تو وہ لکھنؤ یا دہلی میں اپنے نظریات کا اظہار کرسکتا ہے ۔ وہ (اترپردیش) ودھان سبھا یا پارلیمنٹ کا گھیراؤ کریں لیکن ایودھیا میں امن رہنے دیں ‘ ۔ اقبال نے مندر کے شہر میں جمع ہونے کیلئے عوام کی حوصلہ افزائی کرنے والوں کے ارادوں پر شکوک و شبہات کا اظہار کیا اور کہا کہ اس سے مقامی عوام کیلئے مسائل پیدا ہوسکتے ہیں ۔ تاہم انہوں نے سکیورٹی انتظامات کی ستائش کی ۔

TOPPOPULARRECENT