Thursday , December 14 2017
Home / ہندوستان / ’’ایودھیا میں لارڈ رام کے مجسمہ کی تعمیر باعث فخر‘‘

’’ایودھیا میں لارڈ رام کے مجسمہ کی تعمیر باعث فخر‘‘

چاندی کی 10 تیروں کاتحفہ دینے شیعہ وقف بورڈ کا اعلان

لکھنؤ 17 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش شیعہ سنٹرل وقف بورڈ نے کہاکہ ایودھیا میں لارڈ رام کے مجسمہ کی تعمیر تمام ہندوستانیوں کے لئے باعث فخر ہے اور یہ اعلان کیاکہ اظہار احترام کے طور پر ان (لارڈ رام) کے ترکش کے لئے چاندی سے بنی ہوئی 10 تیروں کا تحفہ پیش کیا جائے گا۔ شیعہ وقف بورڈ کے چیرمین وسیم رضوی نے کہاکہ ’’لارڈ رام کے مجسمہ کی تعمیر کے لئے اترپردیش کی حکومت کا فیصلہ قابل ستائش ہے۔ اودھ کی گنگا جمنی تہذیب کو ملحوظ رکھتے ہوئے شیعوں کے پاس لارڈ رام کی چاہت اور احترام کی علامت کے طور پر نقروی تیر پیش کئے جائیں گے۔ چیف منسٹر یوگی آدتیہ ناتھ کے نام اپنے مکتوب میں وسیم رضوی نے کہاکہ لارڈ رام کی تعمیر دراصل اترپردیش کو عالمی نقشہ میں شامل کرے گی۔ رضوی نے کہاکہ ’’اس علاقہ کے نواب ہمیشہ ہی ایودھیا میں مندروں کا احترام کرتے رہے ہیں حتیٰ کہ وسطی ایودھیا میں ہنومان گڑھی کی اراضی کا عطیہ 1739 ء میں نواب شجاع الدولہ نے دیا تھا۔ آصف الدولہ نے 1775 ء اور 1793 ء کے درمیان ہنومان گڑھی مندر کی تعمیر کے لئے فنڈس فراہم کئے تھے‘‘۔ وسیم رضوی نے قبل ازیں دریائے سرایو کے کنارے لارڈ رام کی 100 میٹر بلند مجسمہ کی تعمیر کے لئے آدتیہ ناتھ حکومت کے فیصلے کا خیرمقدم کیا تھا اور دعویٰ کیا تھا کہ یہ اراضی درحقیقت سنی وقف بورڈ کی نہیں بلکہ شیعوں کی ملکیت ہے۔

TOPPOPULARRECENT