Tuesday , April 24 2018
Home / سیاسیات / ایک امیدوار ایک سیٹ : الیکشن کمیشن کی حمایت

ایک امیدوار ایک سیٹ : الیکشن کمیشن کی حمایت

نئی دہلی ،4اپریل (سیاست ڈاٹ کام)انتخابی کمیشن نے ایک امیدوار کے دوسیٹوں سے انتخاب لڑنے کی اجازت سے متعلق پروویژن کے خلاف عرضی کی جہاں سپریم کورٹ میں آج حمایت کی، وہیں عدالت عظمی نے اس معاملہ میں مرکزی حکومت اٹارنی جنرل سے اس سلسلہ میں اپنی رائے دینے کو کہاہے ۔ چیف جسٹس دیپک مشرا ،جسٹس اے ایم کھنولکر اور جسٹس ڈی وائی چندرچوڑکی بنچ نے بی جے پی کے لیڈر اشونی کمار اپادھیائے کی عرضی پر سماعت کے دوران کہا ،”ہم نے اٹارنی جنرل کے کے وینوگوپال سے اس معاملہ میں تعاون مانگاہے ۔انھوں نے تعاون کے لئے رضامندی ظاہر کی ہے ،لیکن عرضی کے جواب کے لئے کچھ مہلت مانگی ہے ۔جسٹس مشرانے وینوگوپال کی درخواست منظور کرتے ہوئے کہاکہ وقت دیاجاتا ہے ۔معاملہ کو اگلی سماعت کے لئے جولائی کے پہلے ہفتہ میں فہرست میں شامل کیا جائے ۔
دریں اثنا انتخابی کمیشن نے حلف نامہ دائر کرکے عرضی گزار کی اس دلیل کی حمایت کی ہے ،جس میں انھوں نے کہا ہے کہ ایک امیدوار کے ایک سے زیادہ سیٹوں پر انتخاب لڑنے سے متعلق عوامی نمائندہ قانون کے پروویژن نامناسب ہیں اور انھیں ختم کیا جاناچاہئے ۔
انتخابی کمیشن نے اپنے حلف نامہ میں کہا کہ امیدوار کو ایک سے زیادہ سیٹوں سے انتخاب لڑنے سے روکا جاناچاہئے ،کیوں کہ اس سے سرکاری خزانہ پر غیر ضروری بوجھ پڑتاہے ۔
حلف نامہ میں کمیشن نے یہ بھی کہاکہ اگر کوئی امیدوار دونوں سیٹ جیتنے کے بعد ایک سیٹ خالی کرتاہے تو اس سے دوسری سیٹ کے ضمنی انتخاب پر آّنے والا خرچ وصول کیا جاناچاہئے ۔

TOPPOPULARRECENT