Wednesday , January 24 2018
Home / کھیل کی خبریں / ایک اور کرکٹر اَنکیت میدان پر انجری کے سبب فوت

ایک اور کرکٹر اَنکیت میدان پر انجری کے سبب فوت

کولکاتا ، 20 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) میدانِ کرکٹ پر ایک اور سانحہ میں جبکہ گزشتہ نومبر فلپ ہیوز کی موت ہوگئی تھی، بنگال کے اُبھرتے بیٹسمن اَنکیت کیشری آج فوت ہوگئے جس کا سبب وہ انجری ہوئی جو کرکٹ اسوسی ایشن آف بنگال (سی اے بی) کے سینئر ونڈے ناک آؤٹ میچ منعقدہ 17 اپریل کے دوران پیش آئی تھی۔ کیشری گزشتہ تین دنوں سے اسپتال میں تھے اور کل شام ت

کولکاتا ، 20 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) میدانِ کرکٹ پر ایک اور سانحہ میں جبکہ گزشتہ نومبر فلپ ہیوز کی موت ہوگئی تھی، بنگال کے اُبھرتے بیٹسمن اَنکیت کیشری آج فوت ہوگئے جس کا سبب وہ انجری ہوئی جو کرکٹ اسوسی ایشن آف بنگال (سی اے بی) کے سینئر ونڈے ناک آؤٹ میچ منعقدہ 17 اپریل کے دوران پیش آئی تھی۔ کیشری گزشتہ تین دنوں سے اسپتال میں تھے اور کل شام تک بحالی کے آثار دکھائی دے رہے تھے جب انھیں منہ سے کھانے کیلئے غذا دی گئی تھی۔ تاہم آج صبح کی ابتدائی ساعتوں میں کیشری قلب پر شدید حملے کا شکار ہوئے اور انھیں ونٹیلیٹر پر رکھنے کے بعد چند گھنٹوں میں مردہ قرار دے دیا گیا۔ 20 سالہ باصلاحیت رائٹ ہینڈر نے بنگال انڈر ۔ 19 ٹیم کی ’کوچ بہار ٹروفی‘ میں قیادت کی تھی اور 30 رکنی انڈیا انڈر۔ 19 ممکنہ کھلاڑیوں کی فہرست برائے 2014ء کولٹس ورلڈ کپ منعقدہ متحدہ عرب امارات (یو اے ای) میں شامل تھے۔ وہ بنگال A (انڈر۔23 ٹیم) کیلئے بھی سی کے نائیڈو نیشنل چمپئن شپ میں کھیل رہے تھے۔ یہ تو بدقسمتی کا بڑا ظالمانہ موڑ سمجھا جاسکتا ہے کہ کیشری قطعی XI کا حصہ نہیں تھے اور اُس بُری یادوں والے میچ میں ٹیم کے 12 ویں کھلاڑی تھے۔ وہ ریلویز کے رانجی آل راؤنڈر اَرنب نندی کی جگہ لینے آئے ، جو کچھ وقفے کیلئے میدان سے گئے تھے۔ یہ واقعہ سالٹ لیک گراؤنڈ میں بڑی مقامی ٹیم ایسٹ بنگال اور بھوانی پورہ کلب کے درمیان ونڈے میچ کے دوران پیش آیا۔ بنگال اے کوچ جئے دیپ مکرجی جو گراؤنڈ پر موجود تھے، انھوں نے نیوز ایجنسی پی ٹی آئی کو بتایا کہ ’’سویپر کوور میں فیلڈنگ کرتے ہوئے کیشری بلند کیچ پکڑنے کیلئے دوڑ پڑے جبکہ لیفٹ آرم پیسر سورو مونڈل بھی اپنے فالو تھروو سے آگے بڑھے۔ دونوں کا ممکنہ حد تک شدید تصادم ہوگیا‘‘۔ مونڈل کے ساتھ ٹکرانے کے بعد کیشری کے منہ سے بہت خون بہنے لگا اور وہ بے ہوش ہوکر گرپڑا۔ سابق بنگال اسپنر شیوساگر سنگھ اور بیٹسمن انوستوپ مجمدار اُسے سنبھالنے دوڑ پڑے۔ درحقیقت، شیوساگر نے کیشری کو کسی طرح ہوش میں لانے کیلئے سی پی آر (کارڈیئک پلمونری ری سسٹیشن) طریقے کے ساتھ منہ سے منہ میں دَم پیدا کرنے کی کوشش کی، جس پر اُس نے دوبارہ سانس لینا شروع کیا۔ پھر اسے نائٹنگیل نرسنگ ہوم سے رجوع کیا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT