Thursday , November 15 2018
Home / Top Stories / ایک خاتون کے دو شوہروں کے ساتھ حکومت تلنگانہ کی فلاحی اسکیم کی تشہیر

ایک خاتون کے دو شوہروں کے ساتھ حکومت تلنگانہ کی فلاحی اسکیم کی تشہیر

اصلی جوڑا منظر عام پر ، چیف منسٹر کے سی آر سے معذرت خواہی کا مطالبہ ، ملو بٹی وکرامارک
حیدرآباد ۔ 20 ۔ اگست : ( سیاست نیوز) : ورکنگ پریسیڈنٹ تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی ملو بٹی وکرامارک نے فلاحی اسکیمات کی تشہیر میں ایک خاتون کو دو شوہروں کے ساتھ پیش کرنے کی سخت مذمت کرتے ہوئے اصل جوڑے کو میڈیا کے سامنے پیش کردیا اور چیف منسٹر کے سی آر سے معذرت خواہی کرنے کا مطالبہ کیا جس پر حکومت نے فوری ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے ایڈ ایجنسی کو نوٹس روانہ کی ۔ خاتون نے تشہیر سے ازدواجی زندگی اجیرن بن جانے اور سماج میں توہین کرنے کا حکومت پر الزام عائد کیا ۔ واضح رہے کہ تلنگانہ حکومت نے 15 اگست کو 2 نئی فلاحی اسکیمات ’ رعیتو بیمہ ‘ اور ’ کنٹی ویلگو ‘ متعارف کروائی ۔ ان دو اسکیمات کی ریاست کی تمام زبانوں میں شائع ہونے والے اخبارات میں ایک ایک صفحات کے اشتہارات جاری کئے ۔ ’ رعیتو بیمہ ‘ کے لیے اصلی جوڑے کی تصویر شائع کی جس میں خاتون کی گود میں بچہ بھی تھا ۔ وہیں ’ کنٹی ویلگو ‘ اسکیم کے لیے وہی خاتون اور بچہ رکھتے ہوئے اس کے شوہر کی تصویر کو ہٹاتے ہوئے دوسرے شخص کو اس خاتون کا شوہر اور بچے کا باپ ظاہر کرتے ہوئے دوسرا اشتہارات شائع کیا گیا جو دیکھتے ہی دیکھتے سوشیل میڈیا میں وائرل ہوگیا ۔ اس غریب جوڑے کا ضلع سوریہ پیٹ کوداڑ منڈل سے تعلق ہے ۔ جن کے نام ناگا راجو اور پدما ہے ۔ اس جوڑے نے کانگریس کے قائد ملو بٹی وکرامارک سے ملاقات کی ۔ قرض دینے کے بہانے ان کی تصویر کھینچتے ہوئے ان کی اجازت کے بغیر اس کو فلاحی اسکیم کا حصہ بنانے کا الزام عائد کیا اور ساتھ ہی پدما نے انہیں دوسرے شخص کی بیوی بتانے پر اپنے گھر میں لڑائی جھگڑے کرانے کے ساتھ محلے اور سماج میں رسوا کرنے کا حکومت پر الزام عائد کیا ۔ ملو بٹی وکرامارک نے کہا کہ حکومت غریب جوڑے کی ازدواجی زندگی سے کھلواڑ کرنے کی کوشش کی ہے ۔ چیف منسٹر کے سی آر اس بھونڈے مذاق پر بلا کسی تاخیر کے فوری معذرت خواہی کریں ۔ اس غریب جوڑے کو انصاف ملنے تک کانگریس پارٹی جدوجہد کرے گی ۔ سوشیل میڈیا میں یہ اشتہار وائرل ہونے اور کانگریس کی جانب سے ردعمل کا اظہار کرنے کے بعد انفارمیشن ڈپارٹمنٹ فوری حرکت میں آگیا اور ایڈ ایجنسی کو نوٹس جاری کردی ۔ اور اس سے وضاحت طلب کی گئی کہ اشتہار کی اشاعت سے قبل اس جوڑے کی رضا مندی حاصل کی گی ہے یا نہیں ۔ پدما نے میڈیا کو بتایا کہ قرض دینے کا وعدہ کرتے ہوئے عہدیداروں نے تصویر لی اور ان کی منظوری کے بغیر اس کو بسوں اور گاڑیوں پر چسپاں کردیا گیا ۔ ان کے شوہر کی تصویر بدل دینے سے گھر میں جھگڑے شروع ہونے کے ساتھ ارکان خاندان کی بے عزتی ہورہی ہے اور سماج میں انہیں رسوا ہونا پڑرہا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT