Friday , September 21 2018
Home / ہندوستان / ایک سال کے اندر پیاز کی قیمتوں میں 400فیصد کااضافہ

ایک سال کے اندر پیاز کی قیمتوں میں 400فیصد کااضافہ

نئی دہلی ۔ 4فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) ملک کی سب سے بڑی ہول سیل پیاز کی مارکٹ جو کہ لاسل گاؤں ‘ پمپل گاؤں اور بنگلور میں ہیں ان میں گذشتہ ایک سال کے اندر 400فیصد تک پیاز کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے ۔ پیاز کی قیمت میں اس قدر تیزی سے بڑھوتری نے پیاز کے تجارت کو نقصان پہنچایا ہے اور وزارت زراعت کے مطابق تقریباً 30فیصد تک اس بازار میں آنے والی گاڑیوں میں گراوٹ درج کی گئی ہے ۔ ملک کے کئی علاقوں میں پیاز کی قیمت میں گراوٹ آئی ہے اور یہ پہلی بار ہوا ہے جب چھ مہینے سے پیاز کی قیمت 30تا 40 روپئے فی کلو کے اوپر گئی ہے ۔ چھوٹے بازاروں میں بھی پیاز کی قیمت میں بہت ہی معمولی اتار چڑھاؤ آیا ہے اور شہریوں میں پیاز کی ریٹیل قیمت 40روپئے فی کلو کے آس پاس رہی ہے ۔ وزارت زراعت کے عہدیداروں کے مطابق پیاز کے پروڈکٹس/ زراعت میں کمی آنے کی وجہ سے معقول حد تک پیاز کی قیمتوں میں کمی نہیں آئے گی ۔ ان کے مطابق امسال پیاز کی پیداوار میں 4.5فیصد کی گراوٹ آئی ہے اور کُل پیداوار 21.4 ملین ٹن رہی جبکہ گذشتہ سال یہ پیداوار22.4 ملین ٹن تھی ۔ انہوں نے مزید کہا کہ مہاراشٹرا ‘ گجرات اور مدھیہ پردیش سے پیاز کی نئی فصل کے آنے پر اس کی قیمت میں کمی آئے گی ۔ وزارت زراعت نے راجیہ سبھا میں اپنے ایک جواب میں اس بات کی تصدیق کی ہے کہ مہاراشٹرا کے بازار میں داخل ہونے والی کُل گاڑیوں میں کمی آئی ہے جب کہ اس کے اطراف کے علاقے 5.01 فیصد سے 31.50فیصد تک ‘انہیں گاڑیوں پر انحصار کرتے ہیں تاہم بازار میں انے والے ٹریکٹرس کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے ۔ سائیکلون کے ساتھ خراب موسم کی وجہ سے شولا پور ‘ ناسک ‘ احمد نگر اور لاسل گاؤں جیسے شہروں میں پیاز کی پیداوار پر اثر پڑا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT