Sunday , November 19 2017
Home / ہندوستان / ایک عہدہ ایک پنشن اسکیم پر عمل آوری میں تاخیر فوج کے تیسرے عہدیدار کے مرن برت کا آغاز

ایک عہدہ ایک پنشن اسکیم پر عمل آوری میں تاخیر فوج کے تیسرے عہدیدار کے مرن برت کا آغاز

نئی دہلی ۔ 18 اگست ۔ ( سیاست ڈاٹ کام )وزیردفاع منوہر پاریکر کے احتجاج ختم کردینے کے مشورہ کی پرواہ کئے بغیر فوج کا تیسرا عہدیدار بھی سابق فوجیوں کے مرن برت میں شامل ہوگیا۔ احتجاج کے ایک حصہ کے طورپر ایک عہدہ ایک پنشن اسکیم پر عمل آوری کیلئے حکومت پر دباؤ ڈالنا اس کا مقصد ہے ۔ حوالدار اشوک چوہان نے بھی ایک عہدہ ایک پنشن کی تائید میں مرن برت کاآغاز کردیا۔ جنتر منتر پر موجود احتجاجیوں نے اُسے اُس کے ارادے سے باز رکھنے کی کوشش کی لیکن وہ اپنے موقف پر اٹل رہا ۔ ریٹائرڈ کرنل انیل کول نے مشیر ذرائع ابلاغ کی حیثیت سے سابق فوجیوں کے متحدہ محاذ کی نمائندگی کرتے ہوئے کہاکہ آج مرن برت دوسرے دن میں داخل ہوگیا ۔ احتجاج میں شدت پیدا کرتے ہوئے مرن برت کا آغاز دو احتجاجی سابق فوجیوں نے کل جنتر منتر پر کیا تھا ۔ دریں اثناء اپنے ایک بیان میں سابق فوجیوں کی اسوسی ایشن نے کہا کہ اُن کی مجلس مشاورت وزیر دفاع سے 16 اگسٹ کو اُن کی قیامگاہ پر ملاقات کرچکی ہے اور انھوں نے مرن برت 24 اگسٹ تک ملتوی کردینے کا مشورہ دیا تھا ۔ انھوں نے تیقن دیا تھا کہ وہ 23 اگسٹ کو وزیراعظم سے ملاقات کریں گے اور کوشش کریں گے کہ اس دیرینہ مسئلہ کا حل تلاش کیا جائے ۔

TOPPOPULARRECENT