ایک میل طویل شہاب ثاقب کا زمین سے ٹکراؤ کا انتباہ

واشنگٹن۔ 13 مئی (سیاست ڈاٹ کام) خلا میں سائنس داں نے ایک اعظم ترین شہاب ثاقب کو دیکھا ہے جس کے بارے میں یہ خدشہ پایا جاتا ہے کہ وہ زمین سے ٹکرا کر تباہی مچا سکتا ہے۔ ایک اندازے کے مطابق شہاب ثاقب کی طوالت ایک میل بتائی گئی ہے اور زمین سے ٹکرا نے کے خدشات دیگر سیاروں سے مقابلہ زائد ہیں، کیونکہ ایسے واقعات سے وقتاً فوقتاً عالمی سطح پر دہش

واشنگٹن۔ 13 مئی (سیاست ڈاٹ کام) خلا میں سائنس داں نے ایک اعظم ترین شہاب ثاقب کو دیکھا ہے جس کے بارے میں یہ خدشہ پایا جاتا ہے کہ وہ زمین سے ٹکرا کر تباہی مچا سکتا ہے۔ ایک اندازے کے مطابق شہاب ثاقب کی طوالت ایک میل بتائی گئی ہے اور زمین سے ٹکرا نے کے خدشات دیگر سیاروں سے مقابلہ زائد ہیں، کیونکہ ایسے واقعات سے وقتاً فوقتاً عالمی سطح پر دہشت پھیلی ہے۔ یہاں اس بات کا تذکرہ ضروری ہے کہ ماہر فلکیات نے 1999 FN53 سے متعلق پہلے ہی انتباہ دیا ہے جو ماؤنٹ ایورسٹ کی سائز کا آٹھواں حصہ بتایا گیا ہے اور جو زمین سے اندرون دو پرواز ٹکرا جائے گا جس سے کافی تباہی ہونے کے اندیشے بتائے جارہے ہیں جن میں زلزلہ کو سب سے زیادہ اہمیت دی گئی ہے۔ دیگر شہاب ثاقب سے مذکورہ شہاب ثاقب حسامت میں 10 گنا بڑا ہے جنہیں ناسا کے ارتھ آبجیکٹ راڈار پر دیکھا جاسکتا ہے۔

اس شہاب شاقب کو گر گنٹوان YB 35 2014 سے دوگنا سائز کا بتایا گیا ہے جن کا ماہر فلکیات نے جاریہ سال مارچ میں نظارہ کیا تھا۔ ماہرین نے یہ انتباہ بھی دیا ہے کہ ٹکر سے اتنا بڑا دھماکہ ہوگا جس میں 1.5 بلین افراد ہلاک ہوجائیں گے جو 1908ء کے ٹونگسو کا واقعہ سے بھی زیادہ تباہ کن ہوگا جس میں 50 میٹر کی بڑی بڑی چٹانیں سائبریا میں ریزہ ریزہ ہوگئی تھیں جبکہ 30 ملین درخت جڑ سے اُکھڑ گئے تھے اور جن مقامات پر وہ درخت تھے، وہ مقام بالکل چٹیل میدان میں تبدیل ہوگیا تھا۔ نہ صرف یہ ہے کہ روس کے دیگر علاقوں میں زلزلہ کے جھٹکے بھی محسوس کئے گئے تھے۔ چٹانوں کے یہی ریزے جو ایک بڑی شکل اختیار کرچکے ہیں جو 30,000 میل فی گھنٹہ کی رفتار سے آگے بڑھ رہے ہیں۔ جمعرات تک زمین کے انتہائی قریب ہوجائیں گے۔ یونیورسٹی آف بکنگھم شائر میں فلکیات کے پروفیسر بل نیپئر نے بھی تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ تباہی کا فی الحال ہم تصور تک نہیں کرسکتے۔ عوام صرف ٹکراؤ کے اثرات سے تشویش میں مبتلا ہیں۔ راڈار پر اس شہاب ثاقب کو یقیناً بہت بڑی سائز کا دکھایا گیا ہے جو ٹونگسو کا سے بڑا ہے جسے تاریخ میں اب تک کا سب سے بڑا شہاب ثاقب تصور کیا جاتا ہے۔ پروفیسر نیپئر نے کہا کہ ہمیں یہی توقع رکھنی چاہئے کہ سب کچھ ٹھیک ٹھاک رہے تاہم عوام کی تشویش بھی اپنی جگہ منصفانہ ہے۔

TOPPOPULARRECENT