Tuesday , June 26 2018
Home / کھیل کی خبریں / ایک پاؤںسے 35 گرانڈ سلام جیتنے والی ڈورس ہارٹ کاانتقال

ایک پاؤںسے 35 گرانڈ سلام جیتنے والی ڈورس ہارٹ کاانتقال

 نیویارک 31مئی (سیاست ڈاٹ کام) دنیا کی سابق نمبر ایک کھلاڑی، امریکی ٹینس چیمپئن اور 1940 سے 1950 کی دہائی میں ایک پاؤں معذور ہونے کے باوجود 35 گرانڈ سلامخطاب جیت چکی امریکہ کی ڈورس ہارٹ کا انتقال ہو گیا ہے،وہ 89 سال کی تھیں۔انٹرنیشنل ٹینس حال آف فیم نے ہارٹ کے انتقال کی اطلاع دی ہے۔ ایک ہی دن میں ومبلڈن میں تین خطاب جیتنے کا ریکارڈ بنانے

 نیویارک 31مئی (سیاست ڈاٹ کام) دنیا کی سابق نمبر ایک کھلاڑی، امریکی ٹینس چیمپئن اور 1940 سے 1950 کی دہائی میں ایک پاؤں معذور ہونے کے باوجود 35 گرانڈ سلامخطاب جیت چکی امریکہ کی ڈورس ہارٹ کا انتقال ہو گیا ہے،وہ 89 سال کی تھیں۔انٹرنیشنل ٹینس حال آف فیم نے ہارٹ کے انتقال کی اطلاع دی ہے۔ ایک ہی دن میں ومبلڈن میں تین خطاب جیتنے کا ریکارڈ بنانے والی ہارٹ کا انتقال ہفتہ کی رات فلوریڈا میں واقع اپنے گھر کورل گیبلس میں ہوا۔اگرچہ ان کے انتقال کی وجوہات کا ابھی پتہ نہیں چل پایا ہے۔ ان کے خاندان میں فی الحال کوئی رکن نہیں ہے۔ 20 جون 1925 میں پیدا ہونے والی ہارٹ نے اپنے کیریئر میں تقریبا ہر خطاب جیتا۔انہوں نے نہ صرف ایک بلکہ ڈبلز اور مخلوط ڈبلز میں بھی چاروں گرانڈ سلام اپنے نام کیے۔ ٹینس کی دنیا میں صرف مارٹنا نوراتلووا اور مارگیٹ کورٹ اسمتھ ہی ان کے جتنے گرانڈ سلام کے قریب پہنچ پائی ہے۔دائیں پاؤں میں اوسٹیو ملٹس کی بیماری سے متاثر ہونے کے باوجود ہارٹ نے ٹینس کی دنیا میں اپنی بادشاہت قائم کی اور 1951 کو وہ نمبر ون خاتون کھلاڑی بنی۔ہارٹ نے سال 1951 میں سات گرنڈ سلام جیتے جس میں بارش کی وجہ سے ومبلڈن میں ایک ہی دن میں تین خطابی جیت شامل ہیں۔ انہوں نے ایک ہی دن میں ومبلڈن میں خواتین سنگلز، خواتین ڈبلز اور مخلوط ڈبلز کے خطاب جیتنے کی شاندار کامیابی اپنے نام کی۔ہارٹ نے تینوں حصوں واحد، ڈبلز اور مخلوط طور فرانسیسی اوپن میں مجموعی طورپر 10، آسٹریلین اوپن میں چار، ومبلڈن میں 10 اور امریکی اوپن میں 11 گرانڈ سلام جیتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT