ایک کھانا ایک میٹھا تحریک کا اضلاع میں مثبت اثر

حیدرآباد ۔ 14 مارچ (راست) شادی بیاہ میں فضول خرچی اور اسراف کے خلاف جناب زاہد علی خاں کی زیرسرپرستی تحریک کا مثبت اثر شہر حیدرآباد کے بعد اضلاع میں بھی ہونے لگا ہے۔ چنانچہ ایک اطلاع کے مطابق بیسیوں شادیاں سادگی سے ہونے لگی ہیں جس میں ایک کھانا اور ایک میٹھا رکھا جارہا ہے۔ 19 مارچ کو سعید فنکشن ہال میں منعقد شدنی سدی پیٹ کے ممتاز تاجر محمد عبدالسلیم کے فرزند کی شادی مقرر ہے، جس میں نکاح میں ایک کھانا ایک میٹھا اور تقریب ولیمہ میں بھی یہی نظم رکھا جارہا ہے۔ جناب محمد عبدالسلیم نے سرپرست اعلیٰ جناب زاہد علی خاں کو مدعو کرتے ہوئے بتایا کہ ولیمہ تقریب میں کئی قسم کے پکوان کا منصوبہ بنایا گیا تھا لیکن اس تحریک سے متاثر ہوکر انہوں نے ایک کھانا ایک میٹھا پکانے کا ارادہ کرلیا اور بتایا کہ اس تعلق سے باورچی جو ابتداء میں معقول معاوضہ کے ساتھ پکا رہے تھے اس مختصر پکوان پر خوشی کا اظہار کیا۔ اس موقع پر اس تحریک کے کارکن سید مسکین احمد بھی موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT