Wednesday , December 13 2017
Home / Top Stories / ایک ہزار گاندھی، ایک لاکھ مودی بھی صاف ستھرا ہندوستان کا مقصد حاصل نہیں کرسکتے

ایک ہزار گاندھی، ایک لاکھ مودی بھی صاف ستھرا ہندوستان کا مقصد حاصل نہیں کرسکتے

ملک کے 125 کروڑ عوام ہی سوچھ بھارت کا نشانہ پورا کرسکتے ہیں، وگیان بھون میں وزیراعظم کا خطاب
نئی دہلی 2 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے آج کہاکہ ’صاف ستھرا‘ ہندوستان کا نشانہ 1000 مہاتما گاندھیوں، ایک لاکھ نریندر مودیوں اور ملک کے تمام چیف منسٹروں کے یکجا ہوجانے کے باوجود بھی پورا نہیں ہوسکتا بلکہ 125 کروڑ عوام کے اتحاد سے یہ مقصد پورا ہوسکتا ہے۔ وزیراعظم نریندر مودی سوچھ بھارت مشن کے تین سال کی تکمیل پر بھارتیہ وگیان بھون میں ایک تقریب سے خطاب کررہے تھے جو اتفاق سے مہاتما گاندھی کے یوم پیدائش کے موقع پر منعقد ہوئی تھی۔ مودی نے کہاکہ اس مہم کے آغاز کے بعد ملک میں بہت کچھ کیا جاچکا ہے لیکن ’صاف ستھرا‘ کے نشانہ کی تکمیل کے لئے ہنوز بہت کچھ کیا جانا باقی ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ صفائی کی اہمیت کو اُجاگر کرنے کیلئے میڈیا اور سیول سوسائٹی کے ارکان نے کلیدی رول ادا کیا ہے۔ اُنھوں نے اس بات پر زور دیا کہ اس بات کا جائزہ لینے کی ضرورت ہے کہ ان گوشوں کی تائید کے باوجود اس پروگرام نے آیا مطلوبہ تحریک اور شدت اختیار کیا ہے۔ مودی نے کہاکہ صفائی کے مسئلہ کو خواتین کے زاویہ نگاہ سے دیکھا جانا چاہئے جنھیں بیت الخلاء کے فقدان کے سبب دشواریوں کا سامنا ہے۔ اُنھوں نے اس صفائی کے کلیدی پروگرام میں سفیر کا رول ادا کرنے والے بچوں کی بھی ستائش کی۔ وزیراعظم مودی نے عوام کے اس اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے مزید کہاکہ ’’1000 مہاتما گاندھی، ایک لاکھ نریندر مودی، ملک کے تمام چیف منسٹرس اور حکومتیں بھی متحد ہوجائیں تو صاف ستھرے ہندوستان کا نشانہ پورا نہیں کرسکتے۔ ہم یہ مقصد صرف اُس وقت حاصل کرسکتے ہیں جب ملک کے 125 کروڑ عوام متحد ہوجائیں‘‘۔ اس مسئلہ کو سیاسی رنگ دینے کی کوششوں کی مخالفت کرتے ہوئے مودی نے کہاکہ ہندوستان کو ایک عظیم ملک بنانے کیلئے اس کو صاف ستھرا بنانا نہایت اہم ہے۔ وزیراعظم نے عوام پر زور دیا کہ وہ صفائی مہم میں حصہ لینے والوں کی محض اس بات پر حوصلہ شکنی نہ کریں کہ حکومت اُنھیں ایسا کرنے کے لئے کہہ رہی ہے۔ مودی نے مزید کہاکہ ’’مودی پر تنقید اور مذمت کرنے کیلئے اور بھی کئی مسائل ہیں۔ چند افراد آپ سے ہزاروں مسائل بیان کریں گے لیکن صفائی برقرار رکھنے والوں کی حوصلہ شکنی نہ کیجئے‘‘۔

TOPPOPULARRECENT