Wednesday , January 17 2018
Home / اضلاع کی خبریں / ایک ہی پارٹی کے 2 امیدواروں کے ووٹوں میں فرق

ایک ہی پارٹی کے 2 امیدواروں کے ووٹوں میں فرق

ظہیرآباد /19 مئی ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) پارلیمانی حلقہ ظہیرآباد کے انتخابات میں منتخب ٹی آر ایس امیدوار بی پی پاٹل کو سات کے منجملہ چھ اسمبلی حلقہ جات میں اپنے قریبی حریف کانگریس امیدوار سریش کمار شیٹکار کے مقابلے میں زائد ووٹ حاصل ہوئے ۔ حلقہ اسمبلی جکل میں ٹی آر ایس امیدوار کو 87991 ووٹ اور کانگریس امیدوار کو 33248 ووٹ ، حلقہ اسمبلی بانسو

ظہیرآباد /19 مئی ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) پارلیمانی حلقہ ظہیرآباد کے انتخابات میں منتخب ٹی آر ایس امیدوار بی پی پاٹل کو سات کے منجملہ چھ اسمبلی حلقہ جات میں اپنے قریبی حریف کانگریس امیدوار سریش کمار شیٹکار کے مقابلے میں زائد ووٹ حاصل ہوئے ۔ حلقہ اسمبلی جکل میں ٹی آر ایس امیدوار کو 87991 ووٹ اور کانگریس امیدوار کو 33248 ووٹ ، حلقہ اسمبلی بانسواڑہ میں ٹی آر ایس امیدوار کو 70464 ووٹ اور کاگنریس امیدوار کو 38173 ووٹ حلقہ اسمبلی یلاریڈی میں ٹی آر ایس امیدوار کو 76995 ووٹ اور کاگنریس امیدوار کو 41648 ووٹ ، حلقہ اسمبلی کاماریڈی میں ٹی آر ایس امیدوار کو 72309 ووٹ اور کانگریس امیدوار کو 58899 ووٹ حلقہ اسمبلی نارائن کھیڑ میں ٹی آر ایس امیدوار کو 49249 ووٹ اور کاگنریس امیدوار کو 59968 ووٹ حلقہ اسمبلی اندول میں ٹی آر ایس امیدوار کو 89673 ووٹ اور کاگنریس امیدوار کو 74913 ووٹ اور حلقہ اسمبلی ظہیرآباد میں ٹی آر ایس امیدوار کو 59302 ووٹ اور کاگنریس امیدوار کو 56090 ووٹ حاصل ہوئے ۔ علاوہ ازیں ٹی آر ایس امیدوار کے حق میں سب سے زیادہ 2678 اور کانگریس امیدوار کے حق میں 1091 پوسٹل بیالٹ پیپرس استعمال کئے گئے ۔ اس طرح ٹی آر ایس امیدوار کو جملہ 508661 ووٹ ، کانگریس امیدوار کو 365030 ووٹ اور تلگودیشم امدیوار کے مدن موہن راؤ کو 154631 ووٹوں کی بھاری اکثریت سے منتخب قرار دیا ۔ انہوں نے اپنی انتخابی کامیابی کا سرٹیفکیٹ ریٹرننگ آفسیر شرت سے ڈی وی آر کالج سنگاریڈی میں واقع مرکز رائے شماری پہونچ کر حاصل کیا ۔ واضح رہے کہ پارلیمانی حلقہ ظہیرآباد کے ٹی آر ایس امیدوار بی بی پاٹل کو حلقہ اسمبلی ظہیرآباد میں 59302 ووٹ حاصل ہوئے جبکہ حلقہ اسمبلی ظہیرآباد کے ٹی آر ایس امیدوار کے مانک راؤ ک56716 ووٹ ملے ۔

TOPPOPULARRECENT