Monday , December 18 2017
Home / Top Stories / ای ویزا پر آنے والے بیرونی سیاحوں کو دو ماہ قیام کی سہولت

ای ویزا پر آنے والے بیرونی سیاحوں کو دو ماہ قیام کی سہولت

ای ویزا کے ٹورسٹ ، بزنس اور میڈیکل تین زمرے ، یکم اپریل سے آزادانہ ویزا پالیسی پر عمل ، سیاحت کا فروغ اہم مقصد
نئی دہلی ۔ 4 اپریل۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستان کا دورہ کرنے والے غیرملکی سیاح جو ای ویزا پر یہاں آئے ہو ، اب ایک ماہ کی بجائے دو ماہ تک قیام کرسکتے ہیں۔ اس کے علاوہ اُنھیں ڈبل ا نٹری فوائد بھی ملیں گے جبکہ علاج کیلئے آنے والوں کو ٹرپل انٹری سہولت دی جائے گی ۔ مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے آج بتایاکہ یکم اپریل سے نئی آزادانہ ویزا پالیسی پر عمل کیا جارہاہے ۔ اس کے تحت ای ویزا پر آنے والے سیاحوں کو دو ماہ تک قیام اور ڈبل انٹری فوائد مہیا کئے جائیں گے ۔ انھوں نے ایک بیان میں بتایا کہ ای ویزا پر آنیوالوں کیلئے قیام کی مدت 30 دن سے بڑھاکر 60 دن کردی گئی ہے ۔ قبل ازیں ای ویزا پر آنے والے سیاحوں کو صرف 30 دن قیام کی اجازت تھی ۔ ڈبل انٹری فوائد کے مطابق سیاح کسی بھی پڑوسی ملک جیسے بھوٹان وغیرہ کا دورہ کرتے ہوئے مقررہ وقت کے اندر ہندوستان واپس آسکتے ہیں ۔ راجناتھ سنگھ نے بتایا کہ حکومت نے سیاحت کے فروغ ، تجارتی سفر اور ملک میں سرمایہ کاروں کو راغب کرنے کیلئے آزادانہ ویزا پالیسی اختیار کی ہے ۔ اس پر یکم اپریل سے عمل ہورہاہے ۔ ای ویزا کو تین زمروں میں تقسیم کیا گیاہے جو ای ٹورسٹ ویزا ، ای بزنس ویزا اور ای میڈیکل ویزا ہیں۔ ای ویزا اسکیم کے تحت درخواست دینے کی مدت کو بھی 30 دن سے بڑھاکر 120 دن کردیا گیا ہے ۔ اس کے علاوہ بزنس اور میڈیکل ویزا کی درخواست کی نوعیت کے اعتبار سے اندرون 48 گھنٹے منظوری دی جائے گی ۔ وزیر داخلہ نے بتایا کہ چھ بڑے ہندوستانی ایرپورٹس پر میڈیکل ٹورسٹ کی مدد کیلئے علحدہ امیگریشن کاؤنٹر اور سہولیات کی فراہمی کیلئے ڈیسک قائم کئے جائیں گے ۔ ان ایرپورٹس میں دہلی ، ممبئی ، کولکاتہ ، چینائی ، بنگلورو اور حیدرآباد شامل ہیں ۔ ویزا کا ایک نیا زمرہ ویزا۔ فلم (ایف ) بھی متعارف کیا جارہا ہے جس کے تحت زیادہ سے زیادہ ایک سال کیلئے متعدد مرتبہ ملک میں آنے کی سہولت رہے گی ۔ ویزا کا دوسرا زمرہ انٹرن ویزا (آئی ) رہے گا جہاں ایسے بیرونی طلبہ جو ہندوستان میں انٹرن شپ کے خواہاں ہیں انھیں یہ ویزا فراہم کیا جائے گا ۔ راجناتھ سنگھ نے بتایا کہ ای ویزا کی سہولت 161 ممالک کے شہریوں کیلئے رہے گی اور وہ 24 ایرپورٹس اور تین سمندری راستوں کوچین ، گوا اور منگلورو سے ہندوستان آسکتے ہیں۔ انھوں نے بتایا کہ کئی ممالک کے شہریوں کے لئے متعدد مرتبہ ملک میں داخل ہونے کی سہولت  کے حامل ٹورسٹ اور بزنس ویزا پانچ سال کی میعاد کے حامل فراہم رہیںگے۔ ایسے مشن جہاں بائیومیٹرک اندراج کی سہولت ہو وہاں پانچ سال کا ٹورسٹ اور بزنس ویزا جاری کرنے کا کام شروع کردیا گیا ہے ۔ مابقی مشنس پر بھی عنقریب یہ سہولت فراہم کی جائے گی ۔ ای ویزا اسکیم کے تحت درخواست گذار کو ای میل موصول ہوتا ہے جس میں اُسے ویزا کی منظوری کے بعد ہندوستان سفر کی اجازت دی جاتی ہے ۔ اس کے بعد وہ اس ای میل کی نقل کے ساتھ ہندوستان کا سفر کرسکتا ہے ۔ یہاں پہونچنے کے بعد اُسے امیگریشن حکام سے رجوع ہونا پڑے گا جہاں وہ ملک میں داخلے کی اجازت دیں گے ۔ وزیر کامرس و انڈسٹری نرملا سیتارامن نے بھی سلسلہ وار ٹوئیٹس میں ای ویزا پر عمل آوری کی تفصیل بتائی ۔

TOPPOPULARRECENT