ای ۔ پاس کا سرور بار بار ڈاؤن ، عوام پریشان

اسکالرشپس ، شادی مبارک اسکیم اور دیگر درخواستوں کا آن لائن ادخال مشکل

اسکالرشپس ، شادی مبارک اسکیم اور دیگر درخواستوں کا آن لائن ادخال مشکل
حیدرآباد 19 مارچ (نمائندہ خصوصی) ریاستی حکومت نے پوسٹ میٹرک اسکالرشپس 2014-15 ء کیلئے آن لائن درخواستیں وصول کرنے کا آغاز کردیا ہے اور اس سلسلہ میں ای پاس (الیکٹرانک پے منٹ اینڈ اپلیکیشن سسٹم آف اسکالرشپس) کی ویب سائٹ پر آن لائن درخواستیں اپ لوڈ کی جارہی ہیں۔ اس طرح ریاستی حکومت کی جانب سے شروع کردہ شادی مبارک اسکیم کی درخواستیں بھی ریاستی حکومت کی اسی ویب سائٹ کے ذریعہ داخل کی جارہی ہیں۔ غرض یہ ویب سائیٹ انتہائی اہمیت کی حامل ہے۔ معذورین، ایس سی، بی سی، ایس ٹی، اقلیتی اور معاشی طور پر پسماندہ طبقات ای بی سی کی تمام بہبودی اسکیمات سے استفادہ کے لئے درخواستوں کا اسی ویب سائٹ کے ذریعہ ادخال عمل میں آتا ہے لیکن افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ گزشتہ چند یوم سے اس ویب سائٹ پر درخواستیں داخل کرنے میں شدید مشکلات پیش آرہی ہیں۔ دن میں متعدد مرتبہ یہ بتایا جارہا ہے کہ سرور ڈاؤن ہے۔ سسٹم میں کچھ نقائص پیدا ہوگئے ہیں۔ دن بھر میں صرف 5 تا 6 درخواستیں ہی داخل ہورہی ہیں۔ حج ہاؤز میں اقلیتی مالیاتی کارپوریشن کے عہدیداروں سے پوچھنے پر یہی جواب دیا جارہا ہے کہ یہ مسئلہ ای پاس کا ہے۔ سیاست ہیلپ لائن پر ہم نے طلباء اولیائے طلبہ اور شادی مبارک اسکیم کے لئے درخواستیں داخل کرنے والوں کا ہجوم دیکھا۔ ان میں سے عائشہ صدیقہ نامی ایک خاتون نے بتایا کہ وہ گزشتہ 3 دن سے آرہی ہیں تاکہ شادی مبارک اسکیم کے فارم کا آن لائن ادخال کیا جائے لیکن ای ۔ پاس میں روز ڈاؤن ہوجانے یا کوئی اور خامی پیدا ہوجانے کے نتیجہ میں فارمس کا ادخال ہی نہیں ہوپارہا ہے۔ دوسری طرف بعض کالج کے انتظامیہ طلبہ پر زور دے رہے ہیں کہ 19 اور 20 مارچ تک فارمس داخل کردیں جبکہ ایم آر او دفاتر میں انکم سرٹیفکٹس اور بی سی سرٹیفکٹس کی اجرائی میں یہ کہتے ہوئے تاخیر کی جارہی ہے کہ فی الوقت معذورین، بیواؤں اور ضعیف شہریوں کے وظائف کی کارروائی جاری ہے حالانکہ عہدیداروں کو تمام زمروں کی درخواستوں کی یکسوئی کرنی چاہئے اور جہاں تک ای پاس کی ویب سائٹ کے سرور ڈاؤن ہوجانے یا ان میں تکنیکی خامیاں پیدا ہونے کا سوال ہے اس پر حکومت تلنگانہ کو خصوصی توجہ دینی ہوگی ورنہ حیدرآبادکے آئی ٹی مرکز ہونے کا مطلب ہی باقی نہیں رہے گا۔

TOPPOPULARRECENT