Sunday , September 23 2018
Home / شہر کی خبریں / اے پی این جی اوز کو الاٹ کردہ اراضی سے دستبرداری کی مذمت

اے پی این جی اوز کو الاٹ کردہ اراضی سے دستبرداری کی مذمت

حکومت اے پی سے مداخلت اور انصاف دلانے کا مطالبہ ، صدر وائی ایس آر سی پی جگن موہن ریڈی

حکومت اے پی سے مداخلت اور انصاف دلانے کا مطالبہ ، صدر وائی ایس آر سی پی جگن موہن ریڈی
حیدرآباد ۔ 4 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز ) : صدر وائی ایس آر کانگریس پارٹی مسٹر جگن موہن ریڈی نے تلنگانہ حکومت کی جانب سے اے پی این جی اوز کو الاٹ کردہ 189 ایکڑ اراضی واپس لے لینے کا فیصلہ کرنے کی سخت مذمت کی ہے اور آندھرا پردیش حکومت کو مداخلت کرتے ہوئے اے پی این جی اوز سے انصاف کرنے کا مطالبہ کیا ۔ مسٹر جگن موہن ریڈی نے کہا کہ تلنگانہ حکومت کا یہ فیصلہ انتقامی کارروائی کے مترادف ہوگا ۔ لہذا حکومت دوبارہ اپنے فیصلے پر نظر ثانی کریں ۔ انہوں نے کہا کہ اے پی این جی اوز کی پلاٹنگ کے لیے حکومت کی جانب سے 189 ایکڑ اراضی مختص کی گئی تھی ۔ 20 سال قبل ہی یہ اراضی اے پی این جی اوز کو فراہم کی گئی ہے ۔ جس کی پلاٹنگ بھی ہوگئی ہے ۔ اے پی این جی اوز کی جانب سے سڑکوں کی تعمیر اور دوسرے بنیادی سہولتوں کی فراہمی کے لیے کروڑہا روپئے خرچ کرچکے ہیں ۔ ایسے حالات میں تلنگانہ حکومت کی جانب سے انہیں الاٹ کردہ اراضی واپس طلب کرلینا غیر مناسب ہے ۔ مسٹر جگن موہن ریڈی نے کہا کہ اگر تلنگانہ حکومت کسی اور کو اراضی الاٹ کرنا چاہتی ہے تو وہ متبادل اراضیات کی نشاندہی کرلیں ۔ مگر اے پی این جی اوز کو جو اراضی مختص کی گئی ہے وہ ہرگز واپس نہ لیں وہ اس معاملے میں پوری طرح اے پی این جی اوز کے ساتھ ہیں ان کی پوری طرح مدد کریں گے ۔ ساتھ ہی جگن موہن ریڈی نے چیف منسٹر آندھرا پردیش مسٹر این چندرا بابو نائیڈو سے بھی اپیل کی کہ وہ اس معاملے میں مداخلت کریں اور اے پی این جی اوز کے ساتھ جو نا انصافی ہورہی ہے اس کا اعلیٰ سطحی جائزہ لیں اور تلنگانہ حکومت سے مذاکرات کرتے ہوئے اے پی این جی اوز سے مکمل انصاف کریں ۔ وہ بھی تلنگانہ حکومت سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ اپنے فیصلے پر از سر نو غور کریں مگر اے پی این جی اوز سے کوئی نا انصافی نہ کریں ۔۔

TOPPOPULARRECENT