Tuesday , September 25 2018
Home / شہر کی خبریں / بابری مسجد مقدمہ کیلئے ایک کروڑ 62 لاکھ کا عطیہ

بابری مسجد مقدمہ کیلئے ایک کروڑ 62 لاکھ کا عطیہ

پرسنل لاء بورڈ اہلِ حیدرآباد کی فراخدلی کا قائل
حیدرآباد۔/10فبروری، ( سیاست نیوز) حیدرآباد کی تاریخ رہی ہے کہ جب کبھی ملک میں قوم و ملت پر برا وقت آیا اہلیان حیدرآباد نے فراخدلی کا بھرپور مظاہرہ کیا۔جب کبھی ملک کے کسی حصہ میں فسادات ہوئے اہل حیدرآباد نے متاثرین کی مدد کیلئے دل کھول کر عطیات روانہ کئے۔ آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے جاریہ اجلاس میں بابری مسجد مقدمہ کی پیروی کے سلسلہ میں تعاون کی درخواست کی گئی تھی جس پر حیدرآباد سے ایک کروڑ 62 لاکھ روپئے بورڈ کے ذمہ داروں کے حوالے کئے گئے۔ حیدرآباد کے مخیر افراد سے یہ رقم عطیات کی شکل میں حاصل کی گئی تھی۔ بتایا جاتا ہے کہ یہ رقم صدر مسلم پرسنل لاء بورڈ مولانا رابع حسنی ندوی، جنرل سکریٹری مولانا ولی رحمانی ، ترجمان مولانا خلیل الرحمن سجاد نعمانی اور ظفر یاب جیلانی ایڈوکیٹ کی موجودگی میں رکن پارلیمنٹ حیدرآباد اسد اویسی نے یہ رقم حوالے کی۔ اس موقع پر شہر کے بعض نامور افراد موجود تھے جنہوں نے گرانقدر عطیہ دیاہے۔ بورڈ کی تاریخ میں شاید یہ پہلا موقع ہے جب کسی شہر سے اس قدر خطیر رقم بطور عطیہ جمع کی گئی۔ یہ رقم سپریم کورٹ میں جاری بابری مسجد مقدمہ کی پیروی اور اس سے متعلق دیگر اُمور پر خرچ کی جائے گی۔ بتایا جاتا ہے کہ بورڈ کے ذمہ دار حیدرآبادیوں کی فراخدلی پر اظہار تشکر کیا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT