Friday , July 20 2018
Home / شہر کی خبریں / بابری مسجد مقدمہ کی سماعت کیلئے کل ہند مسلم پرسنل لا بورڈ کو خطیر رقم درکار

بابری مسجد مقدمہ کی سماعت کیلئے کل ہند مسلم پرسنل لا بورڈ کو خطیر رقم درکار

بورڈ کے حیدرآباد اجلاس میں اخراجات کیلئے مسلمانوں سے رجوع ہونے کا فیصلہ متوقع
حیدرآباد۔8فروری(سیاست نیوز) بابری مسجد مقدمہ کے سلسلہ میں اخراجات کی پابجائی کے لئے کل ہند مسلم پرسنل لاء بورڈ کے پاس وسائل باقی نہیں ہیں۔سپریم کورٹ میں آج شروع ہوئی اس مقدمہ کی سماعت کے لئے کل ہند مسلم پرسنل لاء بورڈ کو خطیر رقم درکار ہے ۔کل ہند مسلم پرسنل لاء بورڈ کے اجلاس کے دوران بابری مسجد مقدمہ کی مؤثر پیروی کو یقینی بنانے کے لئے رقم اکٹھا کرنے کے متعلق بھی تبادلہ خیال کیا جاسکتا ہے۔مسلم پرسنل لاء بورڈ جو کہ بابری مسجد مقدمہ میں فریق ہے اور سپریم کورٹ میں اس مقدمہ کے سلسلہ میں پیروی کر رہاہے کی مالی حالت عدم استحکام کا شکا ر ہے ۔باوثوق ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے مطابق حیدرآباد میں منعقد ہورہے سہ روزہ اجلاس کے دوران مسلم پرسنل لاء بورڈ کے ذمہ داروں کی جانب سے بابری مسجد کے متعلق خصوصی اجلاس کے دوران اس بات کا فیصلہ کیا جا سکتا ہے کہ بابری مسجد مقدمہ کے اخراجات کے لئے بورڈ کو ملک کے مسلمانوں سے رجوع ہونا چاہئے ۔سابق میں بھی مسلم پرسنل لاء بورڈ نے بابری مسجد مقدمہ کے اخراجات کے لئے ملک کے سرکردہ مسلمانوں کے اجلاس منعقد کئے تھے اور اب ایک مرتبہ پھر سے بورڈ کو خطیر مالیہ کی ضرورت درپیش ہے لیکن بورڈ کے پاس اس مقدمہ کی مؤثر پیروی کیلئے سرمایہ موجود نہیں ہے۔بتایاجاتاہے کہ اجلاس کے دوران مسلم پرسنل لاء بورڈ کے ذمہ داران اس مسئلہ پر اراکین سے مشاورت کے بعد قطعی فیصلہ کریں گے۔اس مقدمہ کے سلسلہ میں مسلم پرسنل لاء بورڈ کو درکار سرمایہ کے لئے ہندستانی مسلمانوں سے رجوع ہونے یا ہر ریاست کے سرکردہ مسلم شخصیات ‘ تاجرین و صنعتکاروں سے ربط کرنے کے سلسلہ میں اتوار کے اجلاس میں قطعی فیصلہ کرلیا جائے گا کیونکہ مقدمہ کی سماعت کے دوران مسلم پرسنل لاء بورڈ کو لاکھوں روپئے کے اخراجات کا سامنا ہوتا ہے جس کی پابجائی ناگزیر ہوتی ہے اسی لئے جلد یہ فیصلہ ممکن ہے۔

TOPPOPULARRECENT