Friday , June 22 2018
Home / ہندوستان / بابری مسجد کیس کے عمر رسیدہ فریق محمد فاروق کا انتقال

بابری مسجد کیس کے عمر رسیدہ فریق محمد فاروق کا انتقال

ایودھیا 25 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) بابری مسجد کیس کے سب سے قدیم ترین فریق محمد فاروق کا آج ایودھیا میں بعمر 100 سال انتقال ہوگیا۔ عہدیداروں نے بتایا کہ محمد فاروق ایودھیا کے متوطن تھے، وہ 1949 ء کے بابری مسجد کیس میں مسلمانوں کی جانب سے نمائندگی کرنے والے دیگر 7 اہم فریقوں میں سے ایک تھے۔ ایودھیا میں رام کی مورتی نصب کرنے سے متعلق یہ کیس چل

ایودھیا 25 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) بابری مسجد کیس کے سب سے قدیم ترین فریق محمد فاروق کا آج ایودھیا میں بعمر 100 سال انتقال ہوگیا۔ عہدیداروں نے بتایا کہ محمد فاروق ایودھیا کے متوطن تھے، وہ 1949 ء کے بابری مسجد کیس میں مسلمانوں کی جانب سے نمائندگی کرنے والے دیگر 7 اہم فریقوں میں سے ایک تھے۔ ایودھیا میں رام کی مورتی نصب کرنے سے متعلق یہ کیس چل رہا تھا۔ کل ان کے انتقال کے بعد محمد فاروق کے بڑے فرزند محمد سلیم اپنے والد کی جانب سے اِس کیس میں فریق بن سکتے ہیں اور وہ اپنے والد کی جگہ قانونی کارروائی کرسکتے ہیں۔ ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل حکومت اترپردیش اور کنوینر بابری مسجد ایکشن کمیٹی ظفریاب جیلانی نے یہ بات بتائی۔ محمد فاروق کے والد محمد ظہور اِس کیس میں اصل شکایت کنندگان میں سے ایک تھے۔ مابقی 6 فریقوں میں اسد رشیدی، ہاشم انصاری، مولانا محفوظ الرحمن، مفتی حسیب اللہ محمود اور سنی سنٹرل وقف بورڈ شامل ہیں۔

TOPPOPULARRECENT