Tuesday , January 23 2018
Home / شہر کی خبریں / بابری مسجد کی شہادت ، سالانہ یاد پر حیدرآباد بند اور یوم سیاہ پرامن

بابری مسجد کی شہادت ، سالانہ یاد پر حیدرآباد بند اور یوم سیاہ پرامن

حیدرآباد ۔ 6 ۔ دسمبر : ( این ایس ایس / سیاست نیوز ) : ایودھیا میں بابری مسجد کے انہدام کے سانحہ کی 22 ویں سالانہ یاد کے موقع پر شہر حیدرآباد میں چند مسلم تنظیموں کی طرف سے آج منایا گیا یوم سیاہ اور بند مکمل طور پر پرامن گذر گیا ۔ اس موقع پر حیدرآباد میں دہشت گرد حملوں کے بارے میں مرکزی ادارہ انٹلی جنس بیورو ( آئی بی ) کی جانب سے خبردار کئے جا

حیدرآباد ۔ 6 ۔ دسمبر : ( این ایس ایس / سیاست نیوز ) : ایودھیا میں بابری مسجد کے انہدام کے سانحہ کی 22 ویں سالانہ یاد کے موقع پر شہر حیدرآباد میں چند مسلم تنظیموں کی طرف سے آج منایا گیا یوم سیاہ اور بند مکمل طور پر پرامن گذر گیا ۔ اس موقع پر حیدرآباد میں دہشت گرد حملوں کے بارے میں مرکزی ادارہ انٹلی جنس بیورو ( آئی بی ) کی جانب سے خبردار کئے جانے کے پیش نظر پولیس اور نیم فوجی فورسیس نے سخت ترین سیکوریٹی اقدامات کیے تھے جن کی ماضی میں کوئی نظر نہیں ملتی ۔ تاہم سیکوریٹی خطرات ٹل جانے کے بعد پولیس نے راحت کی سانس لی ۔ بالخصوص پرانا شہر اور دیگر مسلم اکثریتی علاقوں میں اکثر دوکانات ، تجارتی و تعلیمی ادارہ جات بند رہے سڑکوں پر ٹریفک کی آمد و رفت نہیں دیکھی گئی جس کے نتیجہ میں سڑکیں سنسان نظر آرہی تھیں ۔ چارمینار کے اطراف عام طور پر دیکھی جانے والی زبردست تجارتی سرگرمیاں آج نہیں دیکھی گئیں ۔ پرانا شہر کا صدیوں قدیم مارکٹ آج عملاً سنسان نظر آیا ۔ بشمول ایم بی ٹی بعض مسلم جماعتوں کی طرف سے رضاکارانہ بند اور یوم سیاہ منانے کی اپیل پر عوام کا بہتر ردعمل دیکھا گیا ۔ علاقہ کی تقریبا تمام دوکانات بند رہیں ۔ جس سے عام زندگی بھی ٹھپ رہی ۔ بند اور یوم سیاہ کے پیش نظر سٹی پولیس کی طرف سے موثر سیکوریٹی انتظامات کئے گئے تھے ۔ تاریخی مکہ مسجد کے قریب زائد پولیس تعینات کی گئی تھی ۔ پرانا شہر میں امن و امان کی برقراری کو یقینی بنانے کے لیے گذشتہ روز ہی پولیس پٹرولنگ میں اضافہ کردیا گیا تھا ۔ تاریخی مکہ مسجد میں نماز ظہر کے بعد شہر کی صورتحال کو ملحوظ رکھتے ہوئے پولیس نے نہ صرف اطمینان کی سانس لی بلکہ سختی میں کمی بھی کی گئی۔
آج صبح سے امتناعی احکام نافذ کئے گئے تھے جو کل 7 دسمبر کی صبح 6 بجے تک نافذ رہیں گے ۔ حیدرآباد سٹی پولیس کمشنر ایم مہیندر ریڈی نے کہا کہ شہر میں صورتحال پرامن رہی ۔ کہیں بھی کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا ۔ پرانا شہر کے مختلف مقامات پر ریالی نکالنے کی کوششوں میں ملوث تقریبا 50 افراد کو تحویل میں لیا گیا ہے ۔ اندرا پارک اور سعید آباد میں وحدت اسلامی اور مغل پورہ کے علاقہ میں ڈی جے ایس کے کارکنوں نے احتجاج منظم کیا جنہیں پولیس نے فوری طور پر گرفتار کرلیا ۔ ڈی جے ایس کے کارکنوں نے آر ایس ایس ، بجرنگ دل اور وشوا ہندو پریشد کا علامتی پتلہ نذر آتش کیا اور بابری مسجد کی دوبارہ اسی مقام پر تعمیر تک اپنی جدوجہد کو جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کیا ۔ کمشنر ساوتھ زون اور ویسٹ زون کے ڈپٹی کمشنرس انتہائی حساس علاقوں میں وقفہ وقفہ سے گشت کررہے تھے ۔ پولیس گشت کے علاوہ تلاشی مہم میں بھی شدت پیدا کردی گئی تھی ۔ حالات کا جائزہ لینے کے لیے سٹی پولیس کمشنر مسٹر مہیندر ریڈی پرانا شہر پہونچ گئے اور نماز ظہر کے وقت وہ مکہ مسجد کے قریب چارمینار پولیس اسٹیشن میں کیمپ کئے ہوئے تھے ۔ بعد ازاں انہوں نے میڈیا سے کہا کہ بند کے اعلان اور یوم سیاہ کے موقع پر شہر بھر میں کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا ۔ سٹی پولیس کمشنر نے شہریان حیدرآباد کے تعاون کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ شہریوں کے بھر پور تعاون ہی سے سٹی پولیس امن کو برقرار رکھنے میں کامیاب ثابت ہورہی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT