Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / بارش کے بعد جگہ جگہ گندگی، وبائی امراض میں اضافہ

بارش کے بعد جگہ جگہ گندگی، وبائی امراض میں اضافہ

دواخانے مریضوں سے پُر، مچھروں کی افزائش، ڈینگو سے خطرہ
حیدرآباد۔15اکٹوبر (سیاست نیوز) شہر میں بارش اور جگہ جگہ گندگی کے سبب ڈینگو کی وباء تیزی سے پھیلتی جا رہی ہے اور سرکاری دواخانو ںمیں بستر کم پڑنے لگے ہیں ۔ دونوں شہروں میں ہونے والی بارش کے سبب پیدا ہونے والے حالات کے باعث شہر میں مچھروں کی تعداد میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے اور اس اضافہ کے سبب معصوم بچوں میں ڈینگو پھیلنے لگا ہے اس کے تدارک کے لئے فوری سے پیشتراقدامات ناگزیر ہیں کیونکہ اب دواخانوں میں بستر میسر نہیں ہیں اتنی تعداد میں مریض سرکاری دواخانوں سے رجوع ہونے لگے ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ گذشتہ ایک ہفتہ کے دوران ڈینگو کے مریضوں کی تعداد میں زبردست اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے اور اس اضافہ کی بنیادی وجہ شہر میں جگہ جگہ ہونے والی بارش کے سبب پیدا ہو رہی گندگی ہے۔ شہر سے گندگی کی صفائی کے بعد ہی اس بات کی توقع کی جا سکتی ہے کہ جلد ازجلد ڈینگو کی وباء پر قابو پایا جائے گا ۔ محکمہ صحت کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ شہر میں پھیل رہے ڈینگو کو روکنے کے لئے عوامی شعور بیداری ناگزیر ہے کیونکہ جب تک شہری اپنے اطراف و اکناف کے ماحول کو صاف ستھرا رکھنے کے علاوہ بار بار صابن سے ہاتھ اور منہ نہ دھوئیں اس وقت تک اس وباء کو پھیلنے سے نہیں روکا جاسکتا۔ محکمہ صحت کے عہدیداروں نے بتایا کہ ڈینگو ایک وبائی مرض ہے اوریہ متاثرہ شخص کو کاٹنے والے مچھر کے ذریعہ دوسروں تک پہنچتا ہے اسی لئے مچھروں کی افزائش کو روکنے کے ساتھ ساتھ صاف ستھرے ماحول کی فراہمی پر بھی خصوصی توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کی ذمہ داری ہے کہ وہ شہری علاقہ کو صاف ستھرا رکھنے کے اقدامات کو یقینی بنائے اور شہریو ںکی بھی ذمہ داری ہے کہ وہ ڈینگو کے تدارک کیلئے صاف ستھرے ماحول کی فراہمی کے اقدامات کو ممکن بنائیں۔شہر کے سرکاری دواخانو ںکے علاوہ خانگی دواخانوں میں بھی ڈینگو کے متاثرین کی بڑی تعداد رجوع ہونے لگی ہے اور ان کے علاج کو ممکن بنانے کے اقدامات کئے جا رہے ہیں لیکن سرکاری دواخانوں بالخصوص عثمانیہ‘ گاندھی‘ نیلوفر اور فیور ہاسپٹل میں بسترکم پڑنے کے سبب عوام کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ ڈاکٹرس اور طبی عملہ کا کہنا ہے کہ بستروں سے زیادہ مریضوں کی تعداد عملہ کے لئے بھی تکلیف کا باعث بن جاتی ہے اور بیماریوں کے مزید پھیلنے کا خدشہ پیدا ہونے لگتا ہے ۔اسی لئے بستروں اور عملہ کی تعداد میں اضافہ کے علاوہ سہولتوں کی فراہمی پر توجہ مبذول کی جانی چاہئے ۔

TOPPOPULARRECENT