Thursday , December 14 2017
Home / ہندوستان / باٹلہ ہاؤز انکاؤنٹر فرضی تھا

باٹلہ ہاؤز انکاؤنٹر فرضی تھا

عدالتی تحقیقات کا چیالنج:ڈگ وجئے سنگھ
ناگپور ۔ /24 مئی (سیاست ڈاٹ کام) اے آئی سی سی جنرل سکریٹری ڈگ وجئے سنگھ نے آج مرکزی حکومت سے دہلی میں پیش آئے 2008 ء باٹلہ ہاؤز فرضی انکاؤنٹر کی عدالتی تحقیقات کا مطالبہ کیا ۔ اس میں دو مشتبہ دہشت گرد اور ایک پولیس عہدیدار ہلاک ہوگئے تھے ۔ ڈگ وجئے سنگھ نے آج ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ باٹلہ ہاوز انکاؤنٹر فرضی تھا ۔ وہ بی جے پی کو اس انکاؤنٹر کی عدالتی تحقیقات کا چیالنج کرتے ہیں ۔ وہ نہیں جانتے کہ بڑا ساجد یا چھوٹا ساجد کون تھے ۔ یہ انکاؤنٹر اگرچہ کانگریس زیرقیادت یو پی اے دور حکومت کا ہے لیکن حال ہی میں مبینہ طور پر ایک آئی ایس کارکن نے یہ دعویٰ کیا تھا کہ باٹلہ ہاؤز پر پولیس کے دھاوے سے عین قبل وہ فرار ہوگیا تھا ۔ دلچسپ پہلو یہ ہے کہ اس وقت کے مرکزی وزیر داخلہ پی چدمبرم نے کہا تھا کہ سکیورٹی فورسیس اور دہشت گردوں کے مابین بندوق کی لڑائی حقیقی تھی لیکن ڈگ وجئے سنگھ نے اس وقت بھی انکاؤنٹر فرضی ہونے کا دعوی کیا تھا ۔ بی جے پی نے آئی ایس ویڈیو کے حوالے سے کہا کہ یہ انکاؤنٹر حقیقی تھا ۔

TOPPOPULARRECENT