Monday , December 11 2017
Home / Top Stories / بحرین میں دو خیراتی اداروں کے خلاف کارروائی

بحرین میں دو خیراتی اداروں کے خلاف کارروائی

ایرانی ایجنٹ کا بینک اکاؤنٹ منجمد،  10 ملین ڈالر کی رقم ضبط کرنے کا حکم

مناما  ۔ 19جون ( سیسات ڈاٹ کام ) مملکت بحرین میں دو خیراتی اداروں اور ایک کتب خانہ کے عہدہ داروں کے بینک اکاؤنٹس منجمد کردیئے گئے ہیں۔ دی گلف ڈیلی نیوز میں شائع ایک رپورٹ کے مطابق حکام نے یہ کارروائی مثبت مالیاتی سرگرمیوں کی بنیاد پر کی۔ استغاثہ نے الرسالہ سوسائٹی کے ایک عہدہ دار اور اسلامک اویرنیس سوسائٹی کے ایک عہدہ دار کے خلاف کارروائی کا حکم دیا تھا۔ یہ حکم مبینہ طور پر غیر قانونی چیانلوں کے ذریعہ رقومات کی وصولی کے اطلاعات موصول ہونے کے بعد دیا گیا۔ رپورٹ میں مزید بتایا گیا کہ پولیس نے ان خیراتی اداروں کے دفاتر اور دارالیقین لائبریری پر دھاوے کرتے ہوئے ان کی زبردست تلاشی لی۔ پبلک پراسیکیوشن کے ایک بیان میں بتایا گیا کہ بحرین اور بحرین کے باہر سے رقومات جمع کرنے والے مشتبہ ملزمین کے بینک اکاؤنٹس کی تحقیقات کے ایک حصہ کے طور پر تنقیع کی گئی جس پر رقومات کی وصولی اور مالیاتی دین میں کافی فرق پایا گیا۔ بیان میں مزید کہا گیا کہ ان شواہد کی بنیاد پر تحقیقات کے مکمل ہونے تک ملزمین کے تمام مالیاتی ریکارڈ ضبط کرنے کا بھی حکم دیا۔ دوسری اطلاعات کے مطابق مملکت بحرین میں غیر قانونی طور پر رقومات وصول اور جمع کرنے والے افراد کے خلاف سخت قانونی کارروائی کرتے ہوئے ایسے کیسوں کی تحقیقات شروع کی گئی ہے۔ مملکت میں عیسیٰ قاسم نامی شخص کے بینک اکاؤنٹ میں جمع 10 ملین ڈالر کی رقم ضبط کرنے کا حکم دے دیا گیا ہے۔

بحرینی حکام کے مطابق عیسیٰ فاسم ایران کے سرپرست اعلیٰ آیت اللہ خامنہ ای کے ایجنٹ ہیں اور ان کے بینک اکاؤنٹ میں اس قدر کثیر رقم ایران کی بینک ’’مستقبل‘‘ نے منتقلی کی ہے۔ بحرینی پراسیکیوٹر جنرل محمد المالکی نے ایک بیان میں بتایا کہ پراسیکیوشن حکام نے غیر قانونی ذرائع سے فنڈز حاصل کرنے والے تنظیموں اداروں اور افراد کے خلاف بڑے پیمانے پر کارروائی شروع کی ہے اور تحقیقات کا سلسلہ جاری ہے۔ جاری تحقیقات میں الرسالہ الاسلامیہ اور اسلامی بیداری نامی دو غیر سرکاری تنظیموں کا بطور خاص حوالہ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ ان دونوں اداروں اور ایک کتب خانہ کے خلاف کارروائی شروع کردی گئی ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT