Friday , December 15 2017
Home / اضلاع کی خبریں / بدعنوانیوں سے پاک مودی حکمرانی سے عوام میں اعتماد

بدعنوانیوں سے پاک مودی حکمرانی سے عوام میں اعتماد

نلگنڈہ میں بی جے پی قومی صدر امیت شاہ کی پریس کانفرنس

نلگنڈہ /23 مئی ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) بی جے پی مرکزی حکومت کی جانب سے ریاست تلنگانہ کو ایک لاکھ کروڑ روپئے منظور کئے گئے ہیں مودی سرکارپر تین برسوں میں بدعنوانی میں ملوث ہونے کا کوئی الزام نہیں عائد ہوا ۔ صاف و شفاف بدعنوانیوں اور بے قاعدگیوں سے پاک حکمرانی سے عوام میں اعتماد بحال ہوا ہے ۔ یو پی اے حکومت میں 12 لاکھ بدعنوانیوں میں ملوث بھارتیہ جنتا پارٹی قومی صدر امیت شاہ نے اپنے سہ روزہ دورے نلگنڈہ کے موقع پر ضلع بی جے پی آفس پر صحافتی کانفرنس کو مخاطب کرتے ہوئے بتائی ۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ سرکار نے 90 کرؤڑ روپئے کا کوئی استعمال نہیں کیا ہے ۔ حقیقی عوام تک اسکیمات کو پہونچانے اور عمل آوری میں ناکام ہوگئی ہے ۔ انہوں نے جدوجہد تلنگانہ میں قربان ہونے والوں کو نظر انداز کرنے سے متعلق کئے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ بی جے پی شہید اور تلنگانہ کو خراج پیش کرتی ہے اور ان کی قربانیوں کو کبھی فراموش نہیں کرے گی ۔ لیکن رضاکاروں کی جانب سے ہلاک ہوئے خاندانوں سے بھی ہمدردی رکھتی ہے صدر بی جے پی نے کہا کہ سرجیکل اسٹرائیک سے ملک کی سرحدوں کی حفاطت کی ہے ملک کی حفاظت کیلئے حائل ہوکر دشمنوں کا خاتمہ کیا جارہا ہے ۔ پارٹی اور حکومت ملک کی حفاظت پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا ہے ۔ ملک کی غریب عوام کی ترقی کیلئے مرکزی سرکار سنجیدہ اقدامات کر رہی ہے ملک سے وی آئی پی کلچر کا خاتمہ کردیا گیا ہے ۔ ریاست تلنگانہ کو 70 سالوں میں بڑے پیمانے پر مرکزی بجٹ مختصنہیں کیا گیا اور تلنگانہ میں نظمکے فروغ کیلئے یونیورسٹی کونڈہ لکشمن ہارٹیکلچر پی وی نرسمہا راؤ زرعی یونیورسٹی کے علاوہ نمس کو ایمس میں تبدیل کیا گیا ۔ ملک کی ترقی کی شرح میں تین برسوں میں 7.6 فیصد کا اضافہ ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حیدرآباد کو دوسری ریاستوں سے ملانے اور آمد و رفت کی سہولتوں کیلئے بڑے پیمانے پر ریلوے لائینوں کو منظور کیا گیا صدر بی جے پی نے کہا کہ ریاست تلنگانہ میں پارٹی مستحکم ہوئی ہے بی جے پی ملک کی 13 ریاستوں میں اقتدار پر فائز ہے عوام ان حکومتوں کو بھرپور تائید کر رہے ہیں ۔ مرکزی حکومت کی ترقیاتی و فلاحی کاموں کیلئے عوام کو واقف کروانے پر یہاں بھی پارٹی کا موقف مضبوط ہوجائے گا اور 2019 میں توقع ہے کہ بی جے پی کو اقتدار حاصل ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کے 4 کرؤڑ مکمل وقت کے ممبرس ہیں جو پارٹی کے استحکام کیلئے دن رات کام کر رہے ہیں ۔ تلنگانہ میں بی جے پی کی قیادت مستحکم ہے تین برسوں سے مختلف مسائل پر جدوجہد کر رہے ہیں ۔ عوامی مسائل کی یکسوئی کیلئے حکومت پر دباؤ ڈالنے کیلئے جدوجہد کرنے پر عوام کو پارٹی پر اعتماد بحال ہوگا ۔ انہوں نے اخباری نمائندوں کے استفسار پر بتایا کہ بی جے پی آندھراپردیش میں تلگودیشم پارٹی سے اتحاد ہے لیکن تلنگانہ میں کسی بھی پارٹی سے تاحال اتحاد نہیں ہے ۔ اس خصوص میں کوئی پہل ہونے پر واقف کروایا جائے گا ۔ انہوں نے اسمبلی حلقوں کی حد بندی اور اضافہ سے متعلق سوال پر بتایا کہ اس پر پارلیمنٹ میں مباحثہ کے بعد کوئی فصلہ کیا جائے گا ۔ انہوں نے پارٹی قائدین پر زور دیا کہ پارٹی کے استحکام کیلئے جدوجہد کریں اور عوام کے گھروں تک پہونچکر مرکزی حکومت کی کارکردگی سے واقف کروائیں ۔ قبل ازیں صدر بی جے پی نے آج صبح کنگل منڈل کے مادھارم میں پنڈت دین دیال کے مجسمہ کی نقاب کشائی کی اور دلت بستی کو دین دیال کے نام سے موسم کیا اور ناگرجنا ساگر کے حلقہ میں واقع شہرارام منڈل کے دیولاپلی میں دلتوں کے ساتھ کھانا کھایا اور عوام سے مخاطب کیا اور پارٹی کو مضبوط بناے پر زور دیا ۔ اس موقع پر مرکزی وزیر بنڈارو دتاتریہ ریاستی صدر ڈاکٹر لکشمن قومی سکریٹری مریدھر راؤ رکن اسمبلی کشن ریڈی ضلع صدر این نرسمہا ریڈی و دیگر موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT