Thursday , September 20 2018
Home / ہندوستان / بدعنوان جج کے مسئلہ پر منموہن سنگھ سے بیان کا حکومت کا مطالبہ

بدعنوان جج کے مسئلہ پر منموہن سنگھ سے بیان کا حکومت کا مطالبہ

نئی دہلی۔ 23 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم کے دفتر کی جانب سے منموہن سنگھ دورِ اقتدار میں کرپشن کے الزامات کا سامنا کرنے والے جج کو توسیع دینے پر مجبور کرنے کے بارے میں پارلیمنٹ کو اطلاع دینے کے بعد حکومت نے آج مطالبہ کیا کہ سابق وزیراعظم اس متنازعہ معاملہ پر واضح بیان دیں۔ مرکزی وزیر برائے پارلیمانی اُمور ایم وینکیا نائیڈو نے کہا کہ پورا معاملہ سب سے پہلے سابق جج سپریم کورٹ مارکنڈے کاٹجو نے منظر عام پر لایا ہے ، جس سے یو پی اے دور حکومت میں حکومت کی کارکردگی پر روشنی پڑتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سابق وزیراعظم منموہن سنگھ کی اس سلسلے میں خاموشی سے ظاہر ہوتا ہے کہ وہ کچھ نہ کچھ چھپانا چاہتے ہیں۔ اس لئے انصاف کا تقاضہ یہ ہے کہ وہ اس مسئلہ پر واضح بیان دیں۔ ہندوستان کے عوام کو تمام معاملات سے واقف ہونے کا حق ہے۔ مرکزی وزیر قانون روی شنکر پرساد نے کل پارلیمنٹ کو کاٹجو کے الزامات سے واقف کروایا تھا۔

پڑوس پر ہندوستان خصوصی زور دے رہا ہے: وزیر خارجہ
نئی دہلی۔ 23 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان اپنے پڑوسی ممالک پر جو مغربی ایشیا سے مشرقی ایشیا تک پھیلے ہوئے ہیں، خصوصی زور دے رہا ہے، علاوہ ازیں ایک پرامن اور خوش حال دنیا کی تعمیر کے لئے اپنی ذمہ داریوں کا تکمیل کررہا ہے۔ وزیر خارجہ سشما سوراج نے لوک سبھا اور راجیہ سبھا میں وزیراعظم نریندر مودی کے دورہ برازیل کے بارے میں ازخود بیان دیتے ہوئے کہا کہ نئی حکومت سرگرمی سے فیصلہ کن انداز میں پالیسی پر عمل پیرا ہے ، حالانکہ اسے برسراقتدار آئے کچھ ہی دن ہوئے ہیں۔ حکومت، اپوزیشن کانگریس نے زور دیا ہے کہ وزیراعظم برکس کی چھٹی چوٹی کانفرنس کے بارے میں بیان دیں۔ اس پر وزیر خارجہ سشما سوراج نے جوابی وار کرتے ہوئے سابق وزیراعظم منموہن سنگھ نے اپنے دورِ اقتدار میں پانچ برکس چوٹی کانفرنسوں میں شرکت کی تھی، لیکن انہوں نے پارلیمنٹ میں کوئی بیان نہیں دیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نریندر مودی برکس چوٹی کانفرنس سے اور رکن ممالک کے قائدین سے ملاقات پر مطمئن ہیں۔ علاوہ ازیں جنوبی امریکہ کے قائدین سے ملاقات بھی اطمینان بخش رہی۔ سشما سوراج نے کہا کہ ہندوستان اپنے پڑوسی ممالک پر خصوصی زور دے رہا ہے۔
تفصیلات کا انکشاف کرتے ہوئے انہوں نے برکس کے کردار کو اہم قرار دیا ، جو عالمی معاشی فروغ ، استحکام، معاشی ترقی ، وسائل کی قلت کے شکار ممالک اور عالمی امن کے لئے بہت اہم ہے۔

TOPPOPULARRECENT