Monday , December 18 2017
Home / سیاسیات / بدعنوان قائدین کیخلاف کارروائی تمام پارٹیوں کی ذمہ داری: مودی

بدعنوان قائدین کیخلاف کارروائی تمام پارٹیوں کی ذمہ داری: مودی

نئی دہلی17جولائی (سیاست ڈاٹ کام ) وزیر اعظم نریندر مودی نے بدعنوان لیڈروں کے خلاف کارروائی کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے تمام سیاسی پارٹیوں سے ایسے لیڈروں کے خلاف متحد ہونے کی اپیل کی جو اپنے خلاف ہو رہی قانونی کارروائی کو سیاسی سازش بتا کر بچنا چاہتے ہیں۔مودی نے پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس سے قبل حکومت کی جانب سے طلب کردہ کُل جماعتی میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ گزشتہ کئی دہائیوں میں سیاسی لیڈروں کی ساکھ ہمارے درمیان کے ہی کچھ لیڈروں کے برتاؤ کی وجہ سے کٹھہرے میں ہے ۔ ہمیں عوام کو یہ یقین دلانا ہی ہوگا کہ ہر لیڈر بدعنوان نہیں، ہر لیڈر پیسے کے پیچھے نہیں بھاگتا۔ اس لئے عوامی زندگی میں صاف صفائی کے ساتھ ہی بدعنوان لیڈروں پر کارروائی بھی ضروری ہے ۔وزیر اعظم نے کہاکہ کچھ لیڈر اپنے خلاف چل رہی قانونی کارروائی کو سیاسی سازش قرار دے کر بچنے کا راستہ تلاش کر رہے ہیں۔ ایسے لیڈروں کے خلاف تمام پارٹیوں کو متحد ہو کر کام کرنا ہوگا۔ مودی کا اشارہ بالواسطہ طور پر ترنمول کانگریس اور راشٹریہ جنتا دل کے لیڈروں کی جانب تھا جن کے خلاف حال ہی میں سرکاری ایجنسیوں نے بدعنوانی کے الزامات میں کارروائی کی اور ان پارٹیوں نے اسے سیاسی سازش اور بدلے کے جذبہ سے کی جا رہی کارروائی کہا ہے ۔انہوں نے تمام سیاسی پارٹیوں سے بدعنوانی میں ملوث اپنے لیڈروں کے خلاف کارروائی کرنے کی اپیل کی۔ مودی نے کہاکہ ‘ہر سیاسی پارٹی کی ذمہ داری ہے کہ وہ اپنے درمیان موجود ایسے لیڈروں کو پہچانیں اور انہیں اپنی پارٹی کے سیاسی سفر سے الگ کردیں۔ جن لوگوں نے ملک کو لوٹا ہے ، ان کے ساتھ کھڑے رہ کر ملک کو کچھ حاصل نہیں ہوگا۔وزیر اعظم نریندر مودی نے آج سے شروع پارلیمنٹ کے اجلاس باراں کے تعلق سے امید ظاہر کی ہے کہ یہ اجلاس کئی اعتبار سے اہم ہو گا اور تمام سیاسی جماعتیں اور رہنمایان اس میں قومی مفاد کے مسائل پر بات چیت کریں گے ۔ مودی نے ٹوئیٹ کیا ہے کہ وہ امید کرتے ہیں کہ یہ اجلاس ملک میں امکانات کے ایک نئے عہد کا آغاز کرے گا۔پارلیمانی اجلاس شروع ہونے سے پہلے پارلیمنٹ ہاؤس کے احاطے میں نامہ نگاروں کو بتایا، “مجھے یقین ہے کہ اس اجلاس میں تمام سیاسی پارٹیاں اور پارلیمانی اراکین بات چیت کا رخ متحدہ مفاد کے اہم فیصلوں کی طرف رکھیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT