Saturday , January 20 2018
Home / شہر کی خبریں / بدنام زمانہ نعیم کی ٹولی کے 6 ارکان گرفتار

بدنام زمانہ نعیم کی ٹولی کے 6 ارکان گرفتار

سابق ماؤسٹ کناپوری راملو کے قتل کیس میں پولیس کی کارروائی

سابق ماؤسٹ کناپوری راملو کے قتل کیس میں پولیس کی کارروائی

حیدرآباد۔/20مئی، ( سیاست نیوز) کیرالا اور آندھرا پردیش پولیس کے ایک مشترکہ آپریشن میں تلنگانہ راشٹرا سمیتی لیڈر و سابق ماویسٹ کناپوری راملو قتل کیس میں ملوث چھ ملزمین کو تریوندرم میں گرفتار کرلیا ہے۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ راملو کے بیدردانہ قتل میں بدنام زمانہ مجرم و سابق نکسلائیٹ محمد نعیم الدین عرف بھونگیر نعیم ملوث ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ راملو کو منظم منصوبہ کے تحت قتل کیا گیا تھا اور قتل کے فوری بعد ملزمین نے راہ فرار اختیار کرتے ہوئے کیرالا میں پناہ لی تھی۔ مقتول سابق ماویسٹ کے راملو نے سماجی دھارے میں شامل ہوتے ہوئے تلنگانہ راشٹرا سمیتی میں شمولیت اختیار کی تھی اور اسے سیکوریٹی بھی فراہم کی گئی تھی۔ 11مئی کو ضلع نلگنڈہ کے رام نگر علاقہ میں راملو شادی خانہ میں منعقدہ ایک تقریب میں شرکت کے بعد وہ واپس لوٹ رہا تھا کہ نامعلوم افراد نے اس پر اندھا دھند فائرنگ کردی تھی جس کے نتیجہ میں وہ برسر موقع ہلاک ہوگیا تھا۔ پولیس کی ابتدائی تحقیقات میں یہ پتہ چلا تھا کہ راملو قتل کیس کے پس پردہ بدنام زمانہ بھونگیر نعیم کی ٹولی مبینہ طور پر ملوث ہے۔ خاطیوں کو گرفتار کرنے کیلئے خصوصی ٹیمیں تشکیل دی گئی تھیں اور پڑوسی ریاستوں کو بھی اس سلسلہ میں آگاہ کیا گیا تھا۔ پولیس نے نعیم گینگ سے تعلق رکھنے والے چھ افراد ایلیش، کمارا سوامی، رمیش، روی، سومیا اور سریش کو تریوندرم سٹی میں گرفتار کرلیا۔ اس سلسلہ میں تفصیلات بتاتے ہوئے ضلع نلگنڈہ کے سپرنٹنڈنٹ پولیس مسٹر ٹی پربھاکر راؤ نے بتایا کہ کیرالا پولیس کی جانب سے گرفتار کئے گئے افراد کو نلگنڈہ منتقل کرنے کیلئے خصوصی ٹیم روانہ کی جارہی ہے اور ان کی تفتیش میں تفصیلات کا انکشاف متوقع ہے۔ سال2011ء میں نعیم کی ٹولی نے تلنگانہ راشٹرا سمیتی کے پولیٹ بیورو رکن و سابق ماویسٹ سامبا شیوڈو کا قتل کیا تھا۔واضح رہے کہ بھونگیر نعیم پر 40سے زائد قتل، جبراً وصولی اور ماویسٹوں کو ہلاک کرنے کا الزام ہے۔سہراب الدین فرضی انکاؤنٹر کیس کی تحقیقات کررہی سی بی آئی نے اپنی تحقیقات میں یہ پتہ چلایا تھا کہ بھونگیر نعیم نے گجرات پولیس کو سہراب الدین اور اس کی بیوی کوثر بی کی حیدرآباد میں موجودگی کی اطلاع دی تھی اور انہیں خانگی ٹراویلس کی بس سے گجرات پولیس ٹیم نے اغوا کرکے انہیں فرضی انکاؤنٹر میں ہلاک کردیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT