Monday , November 19 2018
Home / دنیا / برازیل کے سابق صدر لُولا کا جیل میں پہلا دن

برازیل کے سابق صدر لُولا کا جیل میں پہلا دن

کوریٹیبا(برازیل) ۔8اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) سابق صدر برازیل لولا ڈاسلوا نے ایک عام جرم کے ارتکاب پر 12سال کی سزائے قید بھگت رہے ہیں ۔ انہوں نے کل برازیل کی پولیس کے آگے خودسپردگی کرلی تھی اور انہیں جیل بھیج دیا گیاتھا ۔ انہوں نے جیل میں آج اپنا پہلا دن گذارا ۔ ان کا نیا گھر بمشکل 160مربع فٹ (15مربع میٹر) کا کمرہ ہے ۔ قبل ازیں یہ کمرہ مرکزی پولیس کا ہیڈ کوارٹر برائے کوریٹیبا رہ چکا ہے ۔ لولا کو گذشتہ سال ایک پرتعیش اپارٹمنٹ ایک تعمیراتی کمپنی کی جانب سے بطور رشوت پیش کیا گیا تھا ‘ بعد ازاں یہ جرم ثابت ہونے پر ایک عدالت نے انہیں 12سال کی سزائے قید سنائی تھی لیکن لولا صدارتی انتخابات سے قبل اس اسکام کے بے نقاب ہونے پر خود کو پولیس کے حوالے کرنے سے گریز کررہے تھے لیکن آخر کار انہوں نے کل خود کو گرفتاری کیلئے پیش کردیا اور انہیں جیل روانہ کردیا گیا ۔ برازیل کے معیار کے مطابق جیل کا یہ کمرہ بالکل اچھی حالت میں ہے ۔ عام طور پر برازیل کی جیلوں میں تشدد کے واقعات عام ہے اور جیل خانے بھرپور ہوتے ہیں ۔ ان کی گرفتاری کے بعد عوام نے ملک گیر سطح پر ان کی گرفتاری کا جشن منایا تھا اور آتش بازی کے مظاہروں کا اہتمام کیا گیا تھا ۔ لولا نے تحت کی عدالت کے فیصلہ کے خلاف اپیل بھی کی تھی تاہم ان کی اپیل بھی ناکام رہی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT