Saturday , November 18 2017
Home / اضلاع کی خبریں / برسراقتدار ٹی آر ایس حکومت کی تعلیم کواولین ترجیح

برسراقتدار ٹی آر ایس حکومت کی تعلیم کواولین ترجیح

میدک میں ایس ٹی اقامتی اسکولی عمارت کا افتتاح ‘ رکن اسمبلی جی وٹھل ریڈی کا خطاب
مدہول /11 اگسٹ ( سیاست ڈسٹر کٹ نیوز ) ریاست میں بر سر اقتدار حکو مت تعلیم کو اولین ترجیح دیتے ہوئے تعلیم کی ترقی کیلئے مثبت اقدامات کر رہی ہے اور کے جی تا پی جی مفت تعلیم کیلئے حکومت لا ئحہ عمل تیار کر چکی ہے تا کہ مستقبل میں ریاست کے ہر بچہ تعلیمی یا فتہ بن سکیں ان خیالات کااظہار مسٹر جی وٹھل ریڈی رکن اسمبلی مدہول نے ایس ٹی اقامتی اسکول عمارت کا افتتاح کے موقع پر کیا انہوں نے کہاکہ تلنگانہ حکومت ٹرایبل ویلفیر اقامتی اسکول تمام تلنگانہ کیلئے جملہ 52 اسکولس منظور کئے جن میں سے عادل آباد ضلع کیلئے 6 اقامتی اسکول منظور کئے گئے جن میں جئے نور ، تر یا نی ، عادل آباد مستقر میں تین ، اندرویلی ، سرپور ٹی ، بو تھ مواضعات شامل ہیں ان مدرسوں میں پا نچویںجماعت میں80 طالبات کا داخلہ دیا جائے گا چھٹویں جماعت کیلئے 40 طالبات کو داخلہ دیا جائے گا انہوں نے کہا کہ تلنگانہ حکو مت ایس ٹی طبقہ کیلئے تعلیمی میدان میں ہندوستان میں ایک منفرد مقام حاصل کیا  بعد ازاں ایم ای او میسا جی ، تحصیلدار ایس دتو ، ایم پی ڈی او نور محمد مدہول ، زیڈ پی لکشمی نر سا گوڑ ، وٹھل وٹھولی سر پنج ، بی انیل مدہول سرپنج ،  افروز خان نائب صدر زرعی مارکیٹ کمیٹی بھینسہ ،اعجاز الدین نائب صدر نشین منڈل پر یشد مدہول نے مشتر کہ خطاب کر تے ہوئے کہاکہ اس سے قبل بھی ایک ٹرایبل ویلفیر بلڈنگ منظور ہو نے کے بعد اب تک تعمیر نہیں ہوئی اور انہوں نے مطالبہ کیا کہ مدہول ایک پسماندہ مقام ہے اور مدہول منڈل میں ایس ٹی طبقہ کے کثیر تعداد میں لو گ موجود ہے ضرورت اس بات کی ہے کہ یہ تلگو اقامتی اسکول جو بھینسہ کیلئے منظور ہوا لیکن بھینسہ میں جگہ کی قلت کے سبب عمارت تعمیر نہیں کی جاسکتی جس کی وجہ سے مدہول عارضی طور پر قائم کیا گیا جب کہ اس اقامتی اسکول کو مدہول پر ہی قائم کیا جائے تا کہ ایس ٹی طالبات تعلیمی میدان میں آگے جا سکے اس کے بعد جی وٹھل ریڈی رکن اسمبلی مدہول خطاب کرتے ہوئے کہاکہ تلنگانہ حکو مت ایس ٹی ایس سی ، بی سی میناریٹی طلباء و طالبات کو تعلیمی میدان میں ترقی دینے کیلئے حکو مت کی جا نب سے اقامتی اسکولس قائم کئے جا رہے ہیں  ایس ٹی اولیا ء ے طلباء سے اپیل کی کہ وہ اپنے بچوںکو اس اقامتی اسکول میں داخلہ دلوائیں انہوں نے کہاکہ مدہول ، تا نور ، کو بیر منڈلوں میں ایس ٹی طبقہ کے لوگ زیادہ موجود ہیں بھینسہ منڈل میں بہت ہی کم تعداد میں ایس ٹی طبقہ کے لو گ پا ئے جا تے ہیں مدہول منڈل کے سرپنجس ، ایم پی ٹی سیز و دیگرسیاسی قائدین نے مطالبہ کیا کہ اس اقامتی اسکول کو مدہول میں مستقل قائم کیا جائے اس تعلق سے متعلقہ عہدیداروں سے نمائندگی کرنے کا تیقن دیا کیو نکہ ان منڈلوں میں ایس ٹی طبقہ کی کثیر تعداد موجود ہے انہوں نے بتا یا کہ چندو لال ٹریبل ویلفیر منسٹر سے اس سے قبل ملاقات کی تھی اور کہاتھا کہ مدہول میں ایس سی طلباء کا ایک ہا سٹل منظور کریں لیکن اسے اوٹنور منتقل کر دیا گیا تھا بعد از ٹریبل ویلفیر منسٹر چندو لال نے انہیں تیقن دیا تھا کہ بہت جلد مدہول اسمبلی حلقہ میں ایک طالبات کیلئے اقامتی اسکول قائم کیا جائے گا لیکن اس کیلئے ہم کو وزیر اعلی سے نمائندگی کر نی پڑی جس کے بعد یہ اقامتی اسکول مدہول اسمبلی کو منظور ی عمل میں آئی مسٹر جی وٹھل ریڈی تحصیلدار کو ہدایت دی کہ گور نمنٹ کی خالی اراضی سروے کر کے 10 ایکٹر کی نشادہی کرنے کی بات کہی انہوں نے کہاکہ مدہول مستقر کی ترقی کیلئے مسلسل چیف منسٹر سے نمائندگی جاری رہے گی اسکول بلڈنگ اور اسکولس تمام ہی ترقیاتی کام مدہول میںکئے جا ئینگے انہوں نے اس بات کا تیقن دیا انہوں نے کہاکہ اس اقامتی اسکول میں ایس سی ، ایس ٹی اور دیگر او بی سی طبقوں کیلئے کچھ فیصد داخلہ دئے جائینگے واضح رہے کہ البنذڈال ٹبلیٹ کی گو لیا ں بھی طالبات میں تقسیم کی گئی بچوں کو کتا بیں بھی تقسیم کی گئی  اس پروگرام میں ایم پی ڈی او ، تحصیلدار دتو ، اسپیشل آفیسر مدہول ، اعجا ز الدین نائب صدر نشین مدہول ، سریندر ریڈی کو آپر یٹو سو سائٹی چیر مین مدہول ، آر رمیش ،سید خالد مخدوم سا بقہ ایم پی ٹی سی ،و دیگر ایس ٹی طبقہ کے اولیائے طلباء کی کثیر تعداد موجود ہے ۔

TOPPOPULARRECENT