Monday , December 11 2017
Home / ہندوستان / برسرخدمت فوجیوں کی جاسوسی مقدمہ میں گرفتاری

برسرخدمت فوجیوں کی جاسوسی مقدمہ میں گرفتاری

نئی دہلی ۔6ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) برسرخدمت ایک فوجی کو آج دہلی پولیس نے مغربی بنگال کے علاقہ سلیگڑی سے آئی ایس آئی سے مربوط جاسوسی کے ریاکٹ میں ملوث ہونے کے الزام میں گرفتار کرلیا ۔اس طرح اس مقدمہ کے سلسلہ میں گرفتاریوں کی تعداد 5ہوگئی ۔ ملزم کی شناخت حولدار فرید خان کی حیثیت سے کی گئی ہے جس نے مبینہ طور پر خفیہ معلومات مشتبہ سراغ رسانی کارروائیوں کیلئے پاکستان کو فراہم کی تھی ‘ انہیں آج سلیگڑی سے گرفتار کیا گیا ۔ کرائم برانچ کی ٹیم نے جو تیزی سے یہاں پہنچی تھی حولدار کو گرفتار کرلیا ۔ اس مقدمہ میں پہلی گرفتاری کفایت اللہ کی تھی جسے 26نومبر کو نئی دہلی سے گرفتار کیا گیا تھا ۔ جب کہ وہ بھوپال جارہا تھا تاکہ ایک مذہبی اجتماع میں شرکت کرسکے اور مزید جاسوسوں کی بھرتی کرسکے ۔بعدازاں بی ایس ایف کے برسرخدمت ارکان عملہ عبدالرشید سابق فوجی حولدار منور احمد میر اور ایک سرکاری اسکول ٹیچر سحر کو کل حراست میں لیا گیاتھا ۔ جب کہ وہ جموں وکشمیر کے علاقہ راجوری میں ایک کرایہ کے مکان میں مقیم تھے ۔ فرید نے اپنا خفیہ نام سرجن رکھا تھا ۔ اُس پر پولیس کی گہری نظرتھی کیونکہ اسے ایک سی ڈی دستیاب ہوئی تھی جس میں فرید خان اور کفایت اللہ کے درمیان بات چیت ریکارڈ تھی ۔ فرید خان کو کل عدالت میں پیش کیا جائے گا اور ٹرانزٹ ریمانڈ حاصل کیا جائے گا تاکہ اسے کل دہلی منتقل کیا جاسکے ۔ فرید خان نے راجوری میں اپنی تعیناتی کے دوران سحر سے ملاقات کی تھی ۔ بعدازاں اس کا تعارف دیگر ارکان سے کروایا تھا جو اس نیٹ ورک کے رکن تھے ۔ کرائم برانچ کی ٹیم نے ایک اطلاع کی بنیاد پر فرید خان کو گرفتار کیا ہے تاہم اس کے قبضہ سے کوئی دستاویزات حاصل نہیں ہوئے۔

TOPPOPULARRECENT