Sunday , May 27 2018
Home / دنیا / برطانوی ہندوستانی نژاد خاتون وزیر کی اسرائیلی قائدین سے خفیہ ملاقات اور استعفیٰ

برطانوی ہندوستانی نژاد خاتون وزیر کی اسرائیلی قائدین سے خفیہ ملاقات اور استعفیٰ

لندن ۔ 9 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) برطانیہ کی سینئر ترین ہندوستانی نژاد خاتون وزیر پریتی پٹیل نے آج اپنے کابینی عہدہ سے استعفیٰ دیدیا۔ یاد رہیکہ اسرائیل میں تعطیلات گزارنے کے دوران انہوں نے خفیہ طور پر متعدد اسرائیلی وزراء سے ملاقاتیں کی تھیں جس کے انکشاف کے بعد ایک سیاسی طوفان برپا ہوگیا تھا اور ان پر استعفیٰ دینے کا دباؤ بڑھ گیا تھا۔ پریتی پٹیل کی اسرائیلی سیاستدانوں بشمول وزیراعظم بنجامن نتن یاہو سے ملاقات کے انکشاف کے بعد بحیثیت ڈیولپمنٹ منسٹران کا موقف کمزور ہوگیا۔ حیرت انگیز بات یہ ہیکہ انہوں نے اسرائیلی سیاستدانوں سے خفیہ ملاقاتوں کا سرے سے کوئی تذکرہ ہی نہیں کیا۔ 45 سالہ پریتی پٹیل نے کل شام اپنا استعفیٰ پیش کردیا۔ موصوفہ افریقہ کے دورہ پر تھیں کہ انہیں وزیراعظم تھریسامے کا پیغام ملا کہ وہ فوری اپنا دورہ مختصر کرتے ہوئے ڈاؤننگ اسٹریٹ میں حاضر ہوں۔ تھریسامے سے ملاقات کے بعد ہی پریتی پٹیل نے اپنا استعفیٰ پیش کیا جس میں انہوں نے اس بات پر معذرت خواہی کی کہ وہ اپنے حلف پر مکمل طور پر عمل آوری نہیں کرسکیں جہاں شفافیت کی قسم کھائی جاتی ہے لیکن اسرائیلی قائدین سے ملاقات کو خفیہ رکھ کر وہ شفافیت کے معیار پر پوری نہیں اتریں۔

TOPPOPULARRECENT