Wednesday , May 23 2018
Home / Top Stories / برطانیہ میں اسلام کے خلاف خانہ جنگی کی تیاری

برطانیہ میں اسلام کے خلاف خانہ جنگی کی تیاری

مستقبل میں برطانیہ کے اندر انتہاء پسندانہ تشدد، نفرت انگیز مہم چلائے جانے کا اندیشہ

لندن ۔ 2 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) برطانیہ میں اسلام کے خلاف خانہ جنگی چھڑجانے کا اندیشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔ برطانیہ کے کٹرپسند اسلام دشمن عناصر نے مسلمانوں کے خلاف خانہ جنگی چھیڑنے کا انتباہ دیا ہے۔ برطانوی انسداد نسل پرستی گروپ کی جانب سے آج ایک نئی رپورٹ جاری کی گئی اس کے مطابق برطانیہ کے اندر نفرت کی مہم چلائی جارہی ہے۔ اس گروپ نے برطانوی حکومت کو خبردار کیا کہ اسے اپنے ملک میں دہشت گرد منصوبوں کو تیار کرنے والوں کے خلاف چوکسی اختیار کرنی ہوگی۔ دائیں بازو شدت پسند گروپس مستقبل قریب میں تشدد بھڑکا سکتے ہیں۔ ہوپ ناٹ ہیٹ کے چیف ایگزیکیٹیو نائک لولس نے کہا کہ آن لائن پر مسلمانوں کے خلاف زبردست مہم چلائی جارہی ہے جو برطانوی عوام کیلئے سنگینی کا باعث ہوسکتی ہے۔ اس سے دہشت گردی کے خطرات میں بھی اضافہ ہوگا۔ اسلام اور مغرب کے درمیان ایک خانہ جنگی چھیڑنے پر ایقان رکھنے والے دائیں بازو انتہاء پسند گروپ نے ملک کر ساری دنیا میں مسلمانوں کے خلاف اتحاد قائم کرنے کی مہم شروع کی ہے۔ فار رائیٹ گروپس کی روایتی رکنیت سازی مہم شروع کرتے ہوئے برطانیہ میں گذشتہ دو دہوں سے یہ کوشش کی جارہی ہیکہ اسلام کے خلاف جنگ چھڑ جائے۔ ان کی سرگرمیوں میں دن بہ دن اضافہ ہورہا ہے اور یہ لوگ آن لائن پیامات بھیجنے میں زیادہ سرگرم ہیں۔ مذہبی نفرت پھیلانے کے علاوہ مسلمانوں کو نشانہ بنایا جارہا ہے۔ برطانیہ میں مشتبہ دہشت گرد حملوں کیلئے اب تک درجنوں افراد گرفتار کرلئے جاچکے ہیں۔ 2017ء میں فار رائیٹ نفرت پر مبنی مہم سے متاثر ہوکر اسلام کے خلاف مہم چلانے والے 28 مشتبہ افراد کو گرفتار کیا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT