Saturday , November 25 2017
Home / دنیا / برطانیہ کو دولت اسلامیہ کی خودکش بم حملوں کی دھمکی

برطانیہ کو دولت اسلامیہ کی خودکش بم حملوں کی دھمکی

FILE - This undated file image posted on a militant website on Jan. 14, 2014, which has been verified and is consistent with other AP reporting, shows fighters from the Islamic State group marching in Raqqa, Syria. The Islamic State’s gruesome rampage across the Middle East has united the world in horror but left it divided over how to refer to the group, with observers adopting different acronyms based on their translation of an archaic geographical term and the extent to which they want to needle the group. (AP Photo/Militant Website, File)

امریکی فضائیہ کے پاس دولت اسلامیہ کے اہداف پر بمباری کیلئے بموں کی قلت
لندن/ واشنگٹن ۔6ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) دولت اسلامیہ کے دہشت گرد گروپ نے برطانیہ کو خودکش بم حملوں کی دھمکی دی ہے ۔ ایک تازہ ویڈیو جو آج ہی جاری کیا گیا ‘کہا گیا ہے کہ برطانوی ارکان پارلیمنٹ کو شام میں جاریہ ہفتہ کے اوائل میں فضائی حملوں میں توسیع کی تائید نہیں کرنا چاہیئے تھا اور انتقامی کارروائی کا آغاز ہوچکا ہے اور خون بہنا شروع ہوجائے گا ۔ ویڈیو فلم میں کہا گیا ہے کہ فرانس پر حملہ صرف ایک آغاز تھا ۔ ویڈیو فلم میں ایک جنگجو کو اے کے 47رائفل لہراتے ہوئے اور دھماکو مادوں کا بیلٹ باندھے ہوئے پیرس کے حملہ آوروں کی ستائش کرتے دیکھا گیا جس میں 130 افراد ہلاک ہوگئے ۔ جنگجو نے کہا کہ شہادت کی طلب کرنے والے شیر ہیں ۔ جنہوں نے فرانس کے دارالحکومت میں زبردستی داخل ہوکر حملہ کیا تھا ۔ روزنامہ ’’ دی سنڈے ٹائمز‘‘ کے بموجب جنگجو انگریزی میں بات کررہا تھا ‘ اُس نے دولت اسلامیہ مخالف اتحاد برائے شام و عراق سے کہا کہ وہ اپنی حفاظت کیلئے اور ہماری بندوقوں سے اس دنیا میں محفوظ رہنے کیلئے حملوں سے باز آجائیں ۔ دریںاثناء انسداد دہشت گردی پولیس ریسٹ مڈلینڈس نے کہاکہ وہ لوگ عبدالحامد عبود جو پیرس حملوں کا سرغنہ تھا اور برمنگھم میں اس کے امکانی حامیوں کے درمیان ربط تلاش کررہے ہیں ۔ واشنگٹن سے موصولہ اطلاع کے بموجب امریکی فضائیہ کے پاس بمباری کیلئے بموں کا ذخیرہ تیزی سے ختم ہوتا جارہا ہے ۔ دولت اسلامیہ کے ٹھکانوں پر شام میں امریکی پائیلٹوں نے 20ہزار سے زیادہ میزائل اور بم حملے کئے ہیں ۔ امریکہ کی بمباری کی مہم دہشت گرد گروپ کے خلاف 15ماہ قبل شروع ہوئی تھی ۔ امریکہ نے دولت اسلامیہ کے دہشت گرد گروپ کے خلاف وہ اپنی فضائیہ کو متحرک کردیا تھا جس نے بڑی تیز رفتاری سے اسلحہ اور گولہ بارود کا استعمال کیا ۔ فضائیہ کے سربراہ اسٹاف جنرل مارک ویلش نے کہا کہ اب بموں کا ذخیرہ امریکی فضائیہ کے پائیلٹس کے پاس تیزی سے ختم ہورہا ہے ۔ امریکی فضائیہ کے ایک عہدیدار نے کہا کہ اسلحہ خانہ میں مطلوب مقاصد کی تکمیل کیلئے اسلحہ و گولہ بارود کا ذخیرہ کافی مقدار میں موجود نہیں ہے۔ فضائیہ نے مزید میزائلس کیلئے مالیہ طلب کیا ہے جو ہتھیاروں کی تیاری کیلئے بھی استعمال کیا جاسکے گا اور تیزی سے مزید ہتھیاروں کا ذخیرہ حاصل کیا جاسکے گا جو آئندہ چار سال تک کافی ہوگا ۔ عہدیدار نے کہا کہ آج کل کی جنگوں کیلئے درست آلات اور صلاحیت انتہائی ضروری ہے تاکہ مطلوبہ مقاصد حاصل ہوسکے ۔

TOPPOPULARRECENT