Sunday , September 23 2018
Home / شہر کی خبریں / برقی سربراہی و خریدی پر کھلے عام مباحث کیلئے ریونت ریڈی کا چیالنج

برقی سربراہی و خریدی پر کھلے عام مباحث کیلئے ریونت ریڈی کا چیالنج

کل جماعتی اجلاس طلب کرنے کا مطالبہ ، کانگریس قائدین و رکن اسمبلی کا بیان
حیدرآباد /10 جنوری ( سیاست نیوز ) کانگریس کے قائد و رکن ا سمبلی ریونت ریڈی نے برقی کی سربراہی اور خریدی پر وزیر برقی سے کھلے عام مباحث کا چیلنج کیا ۔ اس معاملے میں کل جماعتی اجلاس طلب کرنے کا حکومت سے مطالبہ کیا ۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ریونت ریڈی نے کہا کہ 2014 میں اقتدار حاصل کرنے کے بعد چیف منسٹر کے سی آر نے آئندہ تین سال کے دوران ریاست میں 21 ہزار میگاواٹ برقی پیدا کرنے کا اسمبلی کے پہلے اجلاس سے اعلان کیا تھا ۔ وہ اسی وقت 15 ہزار میگاواٹ برقی پیدا کرنے پر چیف منسٹر کو تہنیت پیش کرنے کا اعلان کرچکے تھے ۔ ٹی آر ایس حکومت کے ساڑھے تین سال مکمل ہوچکے ہیں ۔ مگر ابھی تک برقی پراجکٹ کا ایک یونٹ بھی مکمل نہیں ہوا ہے ۔ ٹی آر ایس حکومت نے دو نئے برقی پراجکٹس کا سنگ بنیاد رکھا ۔ اس کی صورتحال جوں کی توں برقرار ہے ۔ ابھی تک کوئی پیشرفت نہیں ہوئی ۔ وہ برقی پر ریاستی وزیر برقی جگدیشور ریڈی کو کھلے عام مباحث کا چیلنج کرتے ہیں ۔ خانگی کمپنیوں سے برقی خریدی کے معاملے میں کئی بے قاعدگیاں ہوئی ہے ۔ سستی اور معیاری برقی کو ترجیح دینے کے بجائے صرف کمیشن کو ترجیح دی گئی ہے ۔ جس سے سرکاری خزانے پر کروڑہا روپئے کا مالی بوجھ عائد ہوا ہے۔ کسانوں سے ہمدردی کا اظہار کرنے کیلئے زرعی شعبہ کو 24 گھنٹے برقی سربراہ نہیں کیا جارہا ہے ۔ بلکہ حکومت اپنی کمیشن کو ترجیح دینے کیلئے خانگی کمپنیوں سے معاہدے کئے ہیں ۔ مرکزی حکومت اور پڑوسی ریاست آندھراپردیش کی تلگودیشم حکومت سستے داموں پر برقی فروخت کرنے کیلئے تیار ہے ۔ اس سے اتفاق کرنے اور سرکاری اداروں سے معاہدہ کرنے کے بجائے ٹی آر ایس حکومت نے خانگی کمپنیوں سے برقی خریدنے کے معاہدہ کئے ہیں یہاں تک کہ چھتیس گڑھ سے بھی زیادہ قیمتوں پر برقی خریدی جارہی ہے ۔ ریونت ریڈی نے ٹی آر ایس حکومت کے سنگ بنیاد رکھے گئے برقی پراجکٹ اور آئندہ شروع کئے جانے والے برقی پراجکٹس پر کل جماعتی اجلاس طلب کرنے کا مطالبہ کیا ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر برقی کو نظر انداز کرتے ہوئے سارے فیصلے چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر کر رہے ہیں ۔ محکمہ برقی میں کیا ہو رہا ہے کیا ہونے والا ہے ۔ جگدیشور ریڈی کو اس کا پتہ بھی نہیں ہے ۔ ریونت ریڈی نے کہا کہ اسمبلی حلقہ کوڑنگل میں 18 ایسے تانڈے ہیں جہاں آج بھی عوام کو برقی کی سہولت میسر نہیں ہے ۔
برقی خریدی کے معاملات میں جو بھی بے قاعدگیاں ہوئی ہیں کانگریس پارٹی اس پر مباحث کیلئے تیار ہے ۔ انڈیا بلس کمپنی کو بچانے کیلئے اس سے روزانہ برقی خریدی جارہی ہے ۔ گجرات کی اس کمپنی سے چیف منسٹر کو اتنی کیسی محبت ہوئی ہے کے سی آر اس کی وضاحت کریں ۔

TOPPOPULARRECENT