Tuesday , September 25 2018
Home / اضلاع کی خبریں / برقی شرح میں اضافہ کے خلاف زبردست احتجاج

برقی شرح میں اضافہ کے خلاف زبردست احتجاج

کریم نگر :24؍ جنوری(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)ریاست میں کانگریس کے ساڑھے آٹھ سالہ دور اقتدار میں من مانی برقی چارجس میں اضافہ کرتے ہوئے صارفین پر ناقابل برداشت بوجھ عائد کیا گیا ہے، حزب مخالف سیاسی قائدین تاجرین بیو پاری صارفین مختلف سنگھموں، یونینوں کے صدور نے ریاستی الیکٹرسٹی ریگولیٹری چیر مین کے آگے زبردست پیمانے پر احتجاج اور اپنے غم

کریم نگر :24؍ جنوری(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)ریاست میں کانگریس کے ساڑھے آٹھ سالہ دور اقتدار میں من مانی برقی چارجس میں اضافہ کرتے ہوئے صارفین پر ناقابل برداشت بوجھ عائد کیا گیا ہے، حزب مخالف سیاسی قائدین تاجرین بیو پاری صارفین مختلف سنگھموں، یونینوں کے صدور نے ریاستی الیکٹرسٹی ریگولیٹری چیر مین کے آگے زبردست پیمانے پر احتجاج اور اپنے غم و غصہ کا اظہار کیا، چارجس میں اضافہ کے سلسلے میں مقامی ضلع پریشد میٹنگ ہال میں جمعرات کو منعقدہ مشاورتی اجلاس میں ریاستی برقی ریگولیٹری بورڈ چیر مین وی بھاسکر ، ارکان آر اشوک چاری، راج گوپال ریڈی ، این پی ڈی سی ایل سی ایم ڈی کارتی کیا مشرا کریم نگر ، کھمم ،ورنگل ،عادل آباد، نظام آباد اضلاع سے متعلقہ ایس ایز ڈی ای ٹیز، ڈی ایز اے اوز وغیرہ نے شرکت کی ۔ صبح ساڑھے دس بجے سے شام ساڑھے پانچ بجے تک جاری اس اجلاس میں کریم نگر کے ساتھ این پی ڈی سی ایل کے حدود میں شامل مختلف اداروں کے وفد بیوپاری سیاسی قائدین قریب 50 افراد نے شرکت کرتے ہوئے برقی چارجس میںاضافہ کی سخت مخالفت کی اورکہا کہ ساڑھے آٹھ سال کی کانگریس کے دور اقتدار میں 25,373ہزار کروڑ روپئے کا اضافہ کر کے اب پھر 2014 میں 9 ہزار کروڑ چارجس کو بڑھا دیئے جانے کے منصوبہ کی تیاری کی جارہی ہے،

اس طرح سے ریاستی صارفین کو بری طرح سے لوٹنے کا طریقہ اپنا لیا جارہا ہے، ٹی ڈی پی دور حکومت میں برقی شعبہ کیلئے ریاستی بجٹ میں 7.8 فیصد فنڈز مختص کیا گیاتھا ،وائی ایس آر 3.9 فیصد کم کردیئے تھے اس طرح وائی ایس آر ، کرن کمار ریڈی نے مل کر 8 لاکھ 11 ہزا رکروڑ بجٹ ہی خرچ کئے ہیں، ٹی ڈی پی قائدین نے یہ الزام عائد کیا، بجٹ میں کمی کی وجہ سے ڈسکام 32 ہزار کروڑ کے بقایہ ہیں برقی چارجس میں اضافہ سے صارفین کو نقصان ہورہا ہے ۔ برقی کٹوتی میں کافی اضافہ ہوچکا ہے ۔ ٹی ڈی پی دور حکومت میں 16 سو کروڑ چارج اضافہ کرنے پر کانگریس دور حکومت میں 25 ہزار 373 کروڑ کا اضافہ کردیا جائے 50پیسے میں حاصل ہونے والی برقی قوت میں عملا ً کمی کرتے ہوئے کمیشن کیلئے کانگریس حکومت 12.50 ادا کرتے ہوئے برقی کی خریداری کی ہے حکومت کو چاہئے کہ برقی پیداوار میں اضافہ کی طرف توجہ دے ، معیاری برقی کی سربراہی کرتے ہوئے خانگی کمپنیوں کے ساتھ انصاف کرے ۔ تلگودیشم قائد وی رمیش نے پارٹی کی جانب سے یہ مطالبہ کیا۔ اس سلسلے میں تحریری درخواست بھی حوالے کی۔ سرچارج کے نام پر برقی بل میں اضافہ کر کے عوام کولوٹ لیا جارہا ہے یہ سراسر نا انصافی ہے کھمم ، ورنگل ، نظام آباد، کریم نگر، عادل آباد اضلاع سے آئے ہوئے مختلف یونین کے صدور انیل ریڈی، سریدھر ریڈی، جی ساہتیا، چکراپانی کے گنگیا، ناگیشور راو ، این چکراپانی،وینکٹ ریڈی اور دیگر قائدین کے علاوہ پرنب و الیکٹرانک میڈیا کے نمائندوں نے بھی برقی شرح میں اضافہ کی سخت مخالفت کی اور ریاستی برقی بورڈ کے طرز عمل کے خلاف کچھ دیر دھرنا بھی دیا گیا۔ اور فوری اضافہ شدہ برقی چارجس میں کمی کا مطالبہ کرتے ہوئے یادداشت حوالے کئے گئے۔

TOPPOPULARRECENT