Saturday , September 22 2018
Home / شہر کی خبریں / برقی شعبہ کی ترقی و ملازمین کی بھلائی کے اقدامات کے سی آر کا کارنامہ

برقی شعبہ کی ترقی و ملازمین کی بھلائی کے اقدامات کے سی آر کا کارنامہ

عارضی ملازمین کو باقاعدہ بنانے کا کارنامہ ، ٹی آر ایس ایم پی کے کویتا کا خطاب
حیدرآباد۔ 8جنوری (سیاست نیوز) رکن پارلیمنٹ کویتا نے کہا کہ تلنگانہ میں برقی شعبہ کی ترقی اور برقی ملازمین کی بھلائی کے اقدامات چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو کا کارنامہ ہے۔ تلنگانہ ریاست کے قیام کے بعد 20 ہزار عارضی برقی ملازمین کی خدمات کو باقاعدہ بنایا گیا جو ملک میں اپنی نوعیت کا منفرد اقدام ہے۔ انہوں نے کہا کہ جینکو ملازمین کے لیے حکومت نے ہیلتھ کارڈ جاری کیے ہیں تاکہ ان کے خاندان کو بہتر طبی سہولتیں فراہم کی جاسکیں۔ برقی شعبہ سے تعلق رکھنے والی مختلف یونینوں سے وابستہ قائدین نے ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرلی۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کویتا نے کہا کہ زرعی شعبہ کو 24 گھنٹے برقی کی سربراہی برقی ملازمین کی کاوشوں کا نتیجہ ہے جس کے لیے وہ ستائش اور مبارکباد کے مستحق ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بلا وقفہ اور مفت برقی کی سربراہی اسکیم کی ملک بھر میں ستائش کی جارہی ہے۔ کویتا نے اپوزیشن کو تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ وہ اسکیم کو ناکام بنانا چاہتے ہیں۔ انہوں نے انتباہ دیا کہ اگر اپوزیشن جماعتیں برقی سربراہی اسکیم میں رکاوٹ پیدا کریں گی تو انہیں کسانوں کے غیض و غضب کا سامنا کرنا پڑے گا ۔ انہوں نے کہا کہ برقی شعبہ میں عارضی ملازمین کی خدمات کو باقاعدہ بنانے کے مسئلہ پر کئی رکاوٹیں کھڑی کی گئیں۔ عدالت میں مقدمات دائر کیے گئے لیکن تمام رکاوٹوں کے باوجود چیف منسٹر نے 20 ہزار عارضی ملازمین کی خدمات کو باقاعدہ بنانے کا کارنامہ انجام دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ برقی شعبہ کی بہتر صورتحال اور زرعی شعبہ کو برقی سربراہی میں ملازمین کا اہم رول ہے۔ انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کے احکامات کے مطابق 650 سی جی ایل ایم جائیدادوں کو باقاعدہ بنایا جائے گا۔ اس موقع پر رکن کونسل این سرینواس ریڈی اور دیگر قائدین موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT