Thursday , December 13 2018

برقی پراجکٹس میں چار ہزار کروڑ کا اسکام : کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی

زرعی شعبہ کو 24 گھنٹے برقی سربراہی کا کانگریس کا کارنامہ : ٹی آر ایس پر کانگریس قائد کی تنقید
حیدرآباد ۔ 11 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز ) : کانگریس کے رکن اسمبلی و سابق ریاستی وزیر کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی نے پاور منسٹر جگدیش ریڈی کو پاور لیس منسٹر قرار دیا ۔ برقی پراجکٹس میں 4 ہزار کروڑ کا اسکام ہونے کا الزام عائد کیا ۔ ان کے الزام کو غلط ثابت کردیا گیا تو سیاست سے کنارہ کشی اختیار کرلینے کا اعلان کیا ۔ آج اسمبلی کے میڈیا ہال میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی نے کہا کہ وزیر برقی نا اہل ہیں جس کی وجہ سے چیف منسٹر کے سی آر برقی پراجکٹس کے علاوہ کسی بھی معاملے میں انہیں نظر انداز کررہے ہیں زرعی شعبہ کو 24 گھنٹے کی سربراہی میں ٹی آر ایس کا کوئی رول نہیں ہے بلکہ کانگریس کا کارنامہ ہے ۔ تلنگانہ کے کانگریس قائدین نے صدر کانگریس مسز سونیا گاندھی سے کامیاب نمائندگی کرتے ہوئے برقی کی سربراہی کے معاملے میں تلنگانہ کو 53 فیصد برقی تقسیم آندھرا پردیش کے بل میں مختص کرائی ہے ۔ جب کہ اثاثہ جات اور قرضہ جات میں تلنگانہ کو 42 فیصد حصہ مختص کیا گیا تھا ۔ اس کے علاوہ کانگریس کے دور حکومت میں جو برقی پراجکٹس شروع کئے گئے تھے ان پراجکٹس سے برقی پیداوار کا آغاز ہوچکا ہے ۔ زرعی شعبہ کو 24 گھنٹے برقی کی سربراہی کا اعزاز کانگریس کو جاتا ہے ۔ مگر ٹی آر ایس حکومت نے یکم جنوری کو ملک کے تمام زبانوں کے اخبارات میں 105 کروڑ روپئے کے اشتہارات دیتے ہوئے اس کو اپنا کارنامہ قرار دینے کی کوشش کی ہے ۔ چھتیس گڑھ سے برقی خریدی کا فیصلہ گھاٹے کا سودا ثابت ہوا ہے ۔ حقائق پیش کرنے والے عہدیداروں کو برداشت نہ کرتے ہوئے تبادلہ کردیا گیا ہے ۔ تلنگانہ حکومت کی جانب سے بھدرادی اور یادادری برقی پراجکٹس کا سنگ بنیاد رکھا گیا ہے ۔ اس میں بھی کئی بے قاعدگیاں اور بدعنوانیاں ہوئی ہیں ۔ ان پراجکٹس کو کمیشن کا ذریعہ بنایا گیا ہے ۔ ان کی شفافیت پر مرکزی حکومت نے بھی شکوک کا اظہار کیا ہے ۔ بی ایچ ای ایل کو دیا گیا کنٹراکٹ اور سولار پراجکٹ میں بھی بدعنوانیاں ہوئی ہیں ۔ وہ اس کو ثابت کرنے کے لیے تیار ہے ۔ حکومت چاہے اسمبلی یا چیف منسٹر کیمپ آفس میں مباحث کا انعقاد کرائے اگر وہ ثابت کرنے میں ناکام ہوں گے تو اپنا استعفیٰ اسپیکر اسمبلی کو پیش کریں گے اور سیاست سے ہمیشہ کے لیے دستبردار ہوجائیں گے ۔ انہوں نے چیف منسٹر کو چیلنج قبول کرنے کا مطالبہ کیا ۔ کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی نے کہا کہ کالیشورم میں جو موٹرس لگائے گئے ہیں وہ بھی کانگریس حکومت کا کارنامہ ہے ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT