Tuesday , December 12 2017
Home / Top Stories / برقی پیداوار اور سربراہی میں تلنگانہ دوسری ریاستوں سے آگے

برقی پیداوار اور سربراہی میں تلنگانہ دوسری ریاستوں سے آگے

ریاست میں برقی بحران پر مکمل قابو پانے کا ادعا ، چیف منسٹر کا خصوصی جائزہ اجلاس
حیدرآباد ۔ 18 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر نے برقی بحران پر مکمل قابو پالینے پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ معیاری برقی کی پیداوار اور سربراہی میں تلنگانہ ملک کی دوسری ریاستوں سے آگے ہونے کا دعویٰ کیا ۔ آج چیف منسٹر نے پرگتی بھون میں محکمہ برقی کے اعلیٰ عہدیداروں کے ساتھ جائزہ اجلاس طلب کیا ۔ یکم جنوری سے ریاست کے کسانوں کو 24 گھنٹے مفت برقی سربراہ کرنے کا اعلان کیا ۔ اس موقع پر وزیر برقی جگدیش ریڈی جینکو ، ٹرانسکو کے سی ایم ڈی پربھاکر راؤ حکومت کے مشیر اعلیٰ راجیو شرما اسپیشل پرنسپل سکریٹری اجئے مشیرا ڈی جی پی مہیندر ریڈی ٹرانسکو جے ایم ڈی سرینواس راؤ کے علاوہ دوسرے عہدیدار بھی موجود تھے ۔ چیف منسٹر نے برقی ملازمین کے خدمات کی ستائش کرتے ہوئے انہیں آئندہ سال سے لفٹ اریگیشن اسکیم ، پمپ ہاوز ، مشین بھاگیرتا اور نئے صنعتوں کے قیام کے لیے ضرورت کے مطابق برقی پیداواری کے لیے خصوصی منصوبہ بندی تیار کرنے کا مشورہ دیا ۔ کے سی آر نے کہا کہ محکمہ برقی کی عمدہ کارکردگی سے ریاست کی شہرت میں اضافہ ہوا ہے ۔ یہی معیار برقرار رکھا گیا تو ہر چیلنج کا کامیابی سے سامنا کیا جاسکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ لفٹ اریگیشن اسکیم کے ساتھ مشین بھاگیرتا کے لیے درکار 300 پمپس سیٹس کو ضرورت کے مطابق برقی سربراہ کریں ۔ اس کے لیے 12 تا 10 ہزار میگا واٹ برقی کی ضرورت ہے ۔ ریاست میں 24 لاکھ زرعی پمپ سیٹس ہیں انہیں بھی یکم جنوری سے 24 گھنٹے برقی سربراہ کرنے کے اقدامات کئے ۔ برقی کی سربراہی کو زراعت ، لفٹ اریگیشن ، مشین بھاگیرتا ، کمرشیل ، انڈسٹریل اور ڈومیسٹک 5 حصوں میں تقسیم کرتے ہوئے کونسے حصہ کے لیے کتنی برقی کی ضرورت ہے ۔ اس کے انتظامات کرلینے کا مشورہ دیا ۔ زرعی شعبہ کو 24 گھنٹے مفت برقی کی سربراہی سے حکومت پر سالانہ 4777 تا 5400 کروڑ روپئے کا سبسیڈی بوجھ عائد ہورہا ہے ۔ ضرورت پڑنے پر حکومت مزید 500 کروڑ روپئے بطور سبسیڈی جاری کرنے کیلیے بھی تیار ہے ۔ لفٹ اریگیشن کے لیے خرچ ہونے والے 10 ہزار کروڑ کا بوجھ بھی حکومت برداشت کرے گی ۔ چیف منسٹر نے ہر ضلع ہیڈکوارٹر پر پاور ٹرانسفارمرس رولنگ اسٹاک اور ہر سب اسٹیشن کے پاس ٹرانسفارمرس دستیاب رکھنے کا مشورہ دیا ۔ ناکارہ ہونے والے ٹرانسفارمرس کو اندرون 24 گھنٹے تبدیل کرنے پر زور دیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT