Wednesday , September 26 2018
Home / اضلاع کی خبریں / برقی کٹوتی سے عوام میں ناراضگی کی لہر

برقی کٹوتی سے عوام میں ناراضگی کی لہر

سنگین مسئلہ کی یکسوئی کرنے حکومت سے مطالبہ

سنگین مسئلہ کی یکسوئی کرنے حکومت سے مطالبہ
محبوب نگر۔/6جولائی، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) جمعہ کی شام 6بجے سے رات 10بجے تک سارا شہر محبوب نگر تاریکی میں غرق ہوگیا۔ صبح 8تا10اور دوپہر 2تا4بجے برقی کٹوتی پہلے سے جاری ہے۔ اس طرح جملہ 8گھنٹے برقی سربراہی مسدود رہی۔ جمعہ کی شام مستقر کے علاوہ دیگر کئی مقامات پر بھی برقی سربراہی مسدود رہی جس کا اثر راست عوامی زندگیوں پر پڑا۔ برقی کی عدم سربراہی سے پانی کی سربراہی کیلئے خاطر خواہ پمپنگ بھی نہیں ہوپارہی ہے جس کی وجہ سے بلدیہ پانی صحیح انداز میں سربراہ نہیں کرپارہی ہے۔ ٹرانسکو ذرائع کے مطابق ضلع کو 14.5 ملین یونٹ برقی درکار ہے جبکہ 9ملین یونٹ ہی سربراہ کی جارہی ہے۔ راماگنڈم میں برقی پیداوار میں جو مسائل درپیش ہیں وہ اور بارش کی کمی سے بھی برقی پیداوار پر برا اثر مرتب ہوا ہے۔ اگر خاطر خواہ بارش ہوتی ہے تو برقی پیداوار کے مسئلہ پر قابو پایا جاسکتا ہے۔دوسری طرف ماہ صیام کے دوران اچانک افطار سے قبل برقی سربراہی مسدود ہونے سے مسلمانوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ مساجد میں افطار، مغرب اور نماز تراویح کیلئے مصلیوں کو تکالیف پیش آئیں اور گھروں میں روزہ دار خواتین بھی گرمی کی شدت اور برقی مسدودی سے پریشان ہیں۔ شہری بار بار محکمہ برقی کے منتظمین کو فون پر استفسار کرتے دیکھے گئے۔ ماہ صیام سے قبل تلنگانہ کی نئی حکومت نے جو بڑے بڑے اعلانات اور تیقن دیئے تھے وہ اب تک ناقابل عمل رہے ہیں۔ برقی سربراہی میں مسلسل خلل اور پینے کے پانی کی سربراہی میں کوئی بہتری نہیں دیکھی جارہی ہے۔ کم از کم اب بھی حکومت خصوصاً ماہ صیام میں مسلمانوں کو درپیش تکالیف کو دور کرنے کے اقدامات کرے ورنہ وہ دن دور نہیں جبکہ عوام حکومت سے نالاں ہوجائیں گے اور نئی حکومت سے ان کی جو توقعات تھیں وہ یکلخت ختم ہوجائیں گی۔

TOPPOPULARRECENT