برقی کے مسئلہ پر ٹی آر ایس ایم پی سمن کا چیلنج قبول: ریونت ریڈی

حیدرآباد۔/10جنوری، ( سیاست نیوز) ٹی آر ایس کے رکن پارلیمنٹ بی سمن کے چیلنج کو کانگریس کے رکن اسمبلی ریونت ریڈی نے قبول کرلیا۔ 12جنوری کو دوپہر 2 بجے پرگتی بھون یا تلنگانہ بھون کے علاوہ کسی بھی مقام پر برقی کے مسئلہ پر مباحث کیلئے تیار ہونے کا اعلان کیا۔ زرعی شعبہ کو 24 گھنٹے برقی کی سربراہی کے بعد سے شعلہ بیان مقرر ریونت ریڈی مسلسل ٹی آر ایس حکومت اور چیف منسٹر کو تنقید کا نشانہ بنارہے ہیں۔ آج انہوں نے وزیر برقی کو کھلے عام مباحث کا بھی چیلنج کیا تھا جس کے بعد ٹی آر ایس کے رکن پارلیمنٹ بی سمن نے مباحث سے اتفاق کرنے کا اعلان کردیا جس پر مثبت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے ریونت ریڈی نے شام میں ایک پریس نوٹ جاری کرتے ہوئے بی سمن کا چیلنج قبول کرلیا ۔ 12 جنوری کو دوپہر 2 بجے چیف منسٹر کی قیامگاہ و کیمپ آفس پرگتی بھون یا ٹی آر ایس کے ہیڈکوارٹرتلنگانہ بھون کے علاوہ کسی بھی مقام پر پہنچ جانے کا اعلان کیا ۔ کانگریس کی جانب سے ان کے علاوہ مباحث میں کانگریس کے رکن اسمبلی سمپت کمار تلنگانہ کانگریس کے ترجمان اعلیٰ شرون کمار بھی حصہ لیں گے ۔ بی سمن بھی اپنے ساتھ کسی کو بھی لاسکتے ہیں جس پر انہیں کوئی اعتراض نہیں ہوگا۔ ریونت ریڈی نے بتایا کہ ریاست تلنگانہ کو برقی بحران سے محفوظ رکھنے کیلئے یو پی اے کی صدرنشین سونیا گاندھی نے تقسیم ریاست بل میں زیادہ برقی مختص کرنے کے علاوہ کانگریس کے دور حکومت میں قائم کردہ برقی پراجکٹس، برقی کی خریدی، نئے برقی پراجکٹس کی تعمیرات میں ہونے والی بے قاعدگیوں کو مباحث کا موضوع بنانے کا فیصلہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ وہ تاریخ اور وقت کا تعین کرچکے ہیں، ٹی آر ایس کے رکن پارلیمنٹ بی سمن جس مقام کا بھی انتخاب کریں گے کانگریس کا وفد پہنچ جائیگا۔

TOPPOPULARRECENT